Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت محمد مصطفیٰﷺ نے فرمایا، مومن وہ ہوتا ہے،جسے لوگ اپنے خون اور مال کا امین بنائیں۔ کنزالعمال حدیث739
چھٹی دعا

6۔ دعائے صبح وشام

سب تعریف اس اللہ کے لیے ہے جس نے اپنی قوت و توانائی سے شب و روز کو خلق فرمایا اور اپنی قدرت کی کار فرمائی سے ان دونوں میں امتیاز قائم کیا اور ان میں سے ہر ایک کومعینہ حدود و مقررہ اوقات کاپابند بنایااور ان کے کم و بیش ہونے کا جو اندازہ مقرر کیا اس کے مطابق رات کی جگہ پر دن اور دن کی جگہ پررات کو لاتا ہے تاکہ اس ذریعہ سے بندوں کی روزی اور ان کی پرورش کا سرو سامان کرے ۔ چنانچہ اس نے ان کے لیے رات بنائی تاکہ وہ اس میں تھکا دینے والی کلفتوں کے بعد آرام کریں اور اسے پردہ قرار دیا تاکہ سکون کی چادر تان کر آرام سے سوئیں اور یہ ان کے لیے راحت و نشاط اور طبعی قوتوں کے بحال ہونے اور لذت و کیف اندوزی کا ذریعہ ہو اور دن کو ان کے لیے روشن و درخشاں پیدا کیا تاکہ اس میں (کار و کسب میں سرگرم عمل ہو کر) اس کے فضل کی جستجو کریں اور روزی کا وسیلہ ڈھونڈیں اور دنیاوی منافع اور اخروی فوائد کے وسائل تلاش کرنے کے لیے اس کی زمین میں چلیں پھریں۔ ان تمام کارفرمائیوں سے وہ ان کے حالات سنوارتا اور ان کے اعمال کی جانچ کرتا ہے اور یہ دیکھتا ہے کہ وہ لوگ اطاعت کی گھڑیوں، فرائض کی منزلوں اور تعمیل احکام کے موقعوں پر کیسے ثابت ہوتے ہیں تاکہ بروں کو ان کی بداعمالیوں کی سزا اور نیکو کاروں کو اچھا بدلہ دے۔
اے اللہ! تیرے ہی لیے تمام تعریف و توصیف ہے کہ تو نے ہمارے لیے (رات کا دامن چاک کرکے ) صبح کا اجالا کیا اور اس طرح دن کی روشنی سے ہمیں فائدہ پہنچایا اور طلب رزق کے مواقع ہمیں دکھائے اور اس میں آفات و بلیات سے ہمیں بچایا۔ ہم اور ہمارے علاوہ سب چیزیں تیری ہیں۔ آسمان بھی اور زمین بھی اور وہ سب چیزیں جنہیں تو نے ان میں پھیلایا ہے۔ وہ ساکن ہوں یا متحر ک، مقیم ہوں یا راہ نورد، فضا میں بلند ہوں یا زمین کی تہوں میں پوشیدہ۔
ہم تیرے قبضہ قدرت میں ہیں اور تیرا اقتدار اور تیری بادشاہت ہم پر حاوی ہے اورتیری مشیت کا محیط ہمیں گھیرے ہوئے ہے۔ تیرے حکم سے ہم تصرف کرتے اور تیری تدبیر و کار سازی کے تحت ہم ایک حالت سے دوسری حالت کی طرف پلٹتے ہیں ۔ جو امر تو نے ہمارے لیے نافذ کیا اور جو خیر اور بھلائی تو نے ہمیں بخشی اس کے علاوہ ہمارے اختیار میں کچھ بھی نہیں ہے اور یہ دن نیا اور تازہ وارد ہے جو ہم پر ایسا گواہ ہے جو ہمہ وقت حاضر ہے۔ اگر ہم نے اچھے کام کئے تو وہ توصیف و ثنا کرتے ہوئے ہمیں رخصت کرے گا اور اگر برے کام کئے تو برائی کرتا ہوا ہم سے علیٰحدہ ہو گا۔
اے اللہ ! تو محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور ہمیں اس دن کی اچھی رفاقت نصیب کرنا اور کسی خطا کے ارتکاب کرنے یا صغیرہ و کبیرہ گناہ میں مبتلا ہونے کی وجہ سے چیں بہ جبیں ہو کر رخصت ہونے سے ہمیں بچائے رکھنا اور اس دن میں ہماری نیکیوں کا حصہ زیادہ کر اور برائیوں سے ہمارا دامن خالی رکھ۔ اور ہمارے لیے اس کے آغاز و انجام کو حمد و سپاس، ثواب و ذخیرہ آخرت اور بخشش و احسان سے بھر دے۔
اے اللہ! کراماً کاتبین پر (ہمارے گناہ قلمبند کرنے کی) زحمت کم کر دے اور ہمارا نامہ اعمال نیکیوں سے بھر دے اور بداعمالیوں کی وجہ سے ہمیں ان کے سامنے رسوا نہ کر۔
بار الٰہا! تو اس دن کے لمحوں میں سے ہر لمحہ و ساعت میں اپنے حاضر بندوںکا حظ و نصیب اور اپنے شکر کا ایک حصہ اور فرشتوں میں سے ایک سچا گواہ ہمارے لیے قرار دے۔
اے اللہ ! تو محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور آگے پیچھے اور داہنے اور بائیں اور تمام اطراف و جوانب سے ہماری حفاظت کر۔ ایسی حفاظت جو ہمارے لیے گناہ و معصیت سے سد راہ ہو ، تیری اطاعت کی رہنمائی کرے اور تیری محبت میں صرف ہو۔
اے اللہ ! تو محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما ۔ اور ہمیں آج کے دن اور آج کی رات اور زندگی کے تما م دنوں میں توفیق عطا فرما کہ ہم نیکیوں پر عمل کریں ، برائیوں کو چھوڑیں، نعمتوں پر شکر اور سنتوں پر عمل کریں، بدعتوں سے الگ تھلگ رہیں اور نیک کاموں کاحکم دیں اور برے کاموں سے روکیں ۔ اسلام کی حمایت و طرفداری کریں، باطل کو کچلیں اور اسے ذلیل کریں ۔ حق کی نصرت کریں اور اسے سر بلند کریں، گمراہوں کی رہنمائی، کمزروں کی اعانت اور درد مندوں کی چارہ جوئی کریں۔
بار الٰہا! محمد اور ان کی آل پر رحمت ناز ل فرما اور آج کے دن کو ان تمام دنوں سے جو ہم نے گزارے، زیادہ مبارک دن اور ان تمام ساتھیوں سے جن کا ہم نے ساتھ دیا اس کو بہترین رفیق اور ان تمام وقتوں سے جن کے زیر سایہ ہم نے زندگی بسر کی اس کو بہترین وقت قرار دے اور ہمیں ان تمام مخلوقات میں سے زیادہ راضی و خوشنود رکھ جن پر شب و روز کے چکر چلتے رہے ہیں اور ان سب سے زیاد ہ اپنی عطا کی ہوئی نعمتوں کا شکر گزار اور ان سب سے زیادہ اپنے جاری کئے ہوئے احکام کا پابند اور ان سب سے زیادہ ان چیزوں سے کنارہ کشی کرنے والا قرار دے جن سے تو نے خوف دلا کر منع کیا ہے۔
اے خدا ! میں تجھے گواہ کرتا ہوں اور تو گواہی کے لیے کافی ہے اور تیرے آسمان اور تیری زمین کو اور ان میں جن جن فرشتوں اور جس جس مخلوق کو تو نے بسایا ہے، آج کے دن اور اس گھڑی اور اس رات میں او ر اس مقام پر گواہ کرتا ہوں کہ میں اس بات کا معترف ہوں کہ صرف تو ہی وہ معبود ہے جس کے علاوہ کوئی معبود نہیں ۔ انصاف کا قائم کرنے والا، حکم میں عدل ملحوظ رکھنے والا، بندوں پر مہربان ، اقتدار کا مالک اور کائنات پر رحم کرنے والا ہے۔
اور اس بات کی بھی شہادت دیتا ہوں کہ محمدصلی اللہ علیہ وآلہ وسلم تیرے خاص بندے رسول اور برگزیدۂکائنات ہیں۔ ان پر تو نے رسالت کی ذمہ داریاں عائد کیں توانہوں نے اسے پہنچایااور اپنی امت کو پند و نصیحت کرنے کا حکم دیا تو انہوں نے نصیحت فرمائی۔
ہماری طرف سے انہیں وہ بہترین تحفہ عطا کر جو تیرے ہر اس انعام سے بڑھا ہوا ہو جو اپنے بندوں میں سے تو نے کسی ایک کو دیا ہو اور ہماری طرف سے انہیں وہ جزا دے جو ہر اس جزا سے بہتر و برتر ہو جو انبیاء میں سے کسی ایک کو تو نے اس کی امت کی طرف سے عطا فرمائی ہو۔ بے شک تو ُ بڑی نعمتوں کا بخشنے والا اور بڑے گناہوں سے درگزر کرنے والا اور ہر رحیم سے زیادہ رحم کرنے والا ہے۔ لہٰذا تو محمد اور ان کی پاک و پاکیزہ اور شریف و نجیب اولاد پررحمت نازل فرما ۔

 

 

 

فہرست صحیفہ کاملہ