Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، اللہ تعالیٰ اس شخص پر زیادہ ناراض ہوتا ہے جس کے پیشِ نظر صرف اس کا پیٹ اور شرم گاہ ہوتی ہے۔ غررالحکم حدیث8173
ستائیسویں دعا

27۔ سرحدوں کے محافظوں کے لئے دعا

بارالٰہا! محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور اپنے غلبہ و اقتدار سے مسلمانوں کی سرحدوں کو محفوظ رکھ اور اپنی قوت و توانائی سے ان کی حفاظت کرنے والوں کو تقویت دے اور اپنے خزانۂ بے پایاں سے انہیں مالا مال کر دے۔
اے اللہ! محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور ان کی تعداد بڑھا دے۔ ان کے ہتھیاروں کو تیز کردے ۔ ان کے حدود و اطراف اور مرکزی مقامات کی حفاظت و نگہداشت کر۔ ان کی جمعیت میں انس و یک جہتی پیدا کر ، ان کے امور کی درستی فرما۔ رسد رسانی کے ذرئع مسلسل قائم رکھ ۔ ان کی مشکلات کے حل کرنے کا خود ذمہ لے۔ ان کے بازو قوی کر ۔ صبر کے ذریعہ ان کی اعانت فرما۔ اور دشمن سے چھپی تدبیروں میں انہیں باریک نگاہی عطا کر۔
اے اللہ! محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور جس شے کو وہ نہیںپہچانتے وہ انہیں پہچنوا دے اور جس بات کا علم نہیں رکھتے، وہ انہیں بتا دے اور جس چیز کی بصیرت انہیں نہیں ہے وہ انہیں سمجھا دے ۔
اے اللہ! محمد اور ان کی آل پر رحمت نازل فرما اور دشمن سے مد مقابل ہوتے وقت غدار و فریب کار دنیا کی یاد ان کے ذہنوں سے مٹا دے اور گمراہ کرنے والے مال کے اندیشے ان کے دلوں سے نکال دے اور جنت کو ان کی نگاہوں کے سامنے کر دے اور جو دائمی قیام گاہیں، عزت و شرف کی منزلیں اور (پانی ، دودھ ، شراب اور صاف و شفاف شہد کی ) بہتی ہوئی نہریں اور طرح طرح کے پھلوں ( کے بار ) سے جھکے ہوئے اشجار وہاں فراہم کئے ہیں ، انہیں دکھا دے تاکہ ان میں سے کوئی پیٹھ پھرانے کا ارادہ اور اپنے حریف کے سامنے سے بھاگنے کا خیال نہ کرے۔
اے اللہ!اس ذریعہ سے ان کے دشمنوں کے حربے کند اور انہیں بے دست و پاکر دے اور ان میں اور ان کے ہتھیاروں میں تفرقہ ڈال دے ، ( یعنی ہتھیار چھوڑ کر بھاگ جائیں ) اور ان کے رگ دل کی طنابیں توڑ دے اور ان میں اور ان کے آذوقہ میں دوری پیدا کر دے اور ان کی راہوں میں انہیں بھٹکنے کے لیے چھوڑ دے اور ان کے مقصد سے انہیں بے راہ کردے۔ ان کی کمک کا سلسلہ قطع کعد ان کی گنتی کم کر دے۔ ان کے دلوں میں دہشت بھر دے۔ ان کی دراز دستیوں کو کوتاہ کر دے، ان کی زبانوں میں گرہ لگا دے کہ بول نہ سکیں اور انہیں سزا دے کر ان کے ساتھ ساتھ ان لوگوں کو بھی تتربتر کر دے، جو ان کے پس پشت ہیں اور پس پشت والوں کو ایسی شکست دے کہ جو ان کے پشت پر ہیں انہیں عبرت حاصل ہو اور ان کی ہزیمت و رسوائی سے ان کے پیچھے والوں کے حوصلے توڑ دے ۔
اے ا للہ! ان کی عورتوں کے شکم بانجھ ، ان کے مردوں کے صلب خشک اور ان کے گھوڑوں، اونٹوں، گائیوں، بکریوں کی نسل قطع کر دے اور ان کے آسمان کو برسنے کی اور زمین کو روئیدگی کی اجازت نہ دے ۔
بارالٰہا! اس ذریعہ سے اہل اسلام کی تدبیروں کو مضبوط ، ان کے شہروں کو محفوظ اور ان کی دولت و ثروت کو زیادہ کر دے اور انہیں عبادت وخلوت گزینی کے لیے جنگ و جدال اور لڑائی جھگڑے سے فارغ کر دے تاکہ روئے زمین پر تیرے علاوہ کسی کی پرستش نہ ہو اور تیرے سوا کسی کے آگے خاک پر پیشانی نہ رکھی جائے۔
اے اللہ! تو مسلمانوں کو ان کے ہر ہر علاقہ میں برسرپیکار ہونے والے مشرکوں پر غلبہ دے اور صف در صف فرشتوں کے ذریعہ ان کی امداد فرما تاکہ اس خطہ زمین میں انہیں قتل و اسیر کرتے ہوئے اس کے آخری حدود تک پسپا کر دیں یا یہ کہ وہ اقرار کریں کہ تو وہ خدا ہے جس کے علاوہ کوئی معبود نہیں اور یکتا و لاشریک ہے۔
خدایا! مختلف اطراف و جوانب کے دشمنان دین کو بھی اس قتل و غارت کی لپیٹ میں لے لے۔ وہ ہندی ہوں یا رومی ترکی ہوں یا خزری، حبشی ہوں یا نوبی، زنگی ہوں یا صقلبی و دیلمی اور نیز ان مشرک جماعتوں کو جن کے نام اور صفات ہمیں معلوم نہیں اور تو اپنے علم سے ان پر محیط اور اپنی قدرت سے ان پر مطلع ہے۔
اے اللہ! مشرکوں کو مشرکوں سے الجھا کر مسلمانوں کے حدود مملکت پر دست درازی سے باز رکھ اور ان میں کمی واقع کرکے مسلمانوں میں کمی کرنے سے روک دے اور ان میں پھوٹ ڈلو ا کر اہل اسلام کے مقابلہ میں صف آرائی سے بٹھا دے۔
اے اللہ! ان کے دلوں کو تسکین و بے خوفی سے، ان کے جسموں کو قوت و توانائی سے خالی کر دے۔ ان کی فکروں کو تدبیر و چارہ جوئی سے غافل اور مردان کارزار کے مقابلہ میں ان کے دست و بازو کو کمزور کر دے اور دلیران اسلام سے ٹکر لینے میں انہیں بزدل بنا دے اور اپنے عذابوں میں سے ایک عذاب کے ساتھ ان پر فرشتوں کی سپاہ بھیج۔ جیسا کہ تو نے بدر کے دن کیا تھا۔ اسی طرح تو ان کی جڑ بنیادیں کاٹ دے۔ ان کی شان و شوکت مٹا دے اور ان کی جمعیت کو پراگندہ کردے۔
اے اللہ!ان کے پانی میں وبااور ان کے کھانوں میں امراض ( کے جراثیم)کی آمیزش کر دے۔ ان کے شہروں کو زمین میں دھنسا دے، انہیں ہمیشہ پتھروں کا نشانہ بنا اور قحط سالی ان پر مسلط کر دے۔ ان کی روزی ایسی سر زمین میں قرار دے جو بنجر اور ان سے کوسوں دور ہو۔ زمین کے محفوظ قلعے ان کے لیے بند کر دے اور انہیں ہمیشہ کی بھوک اور تکلیف دہ بیماریوں میں مبتلا رکھ۔
بارالٰہا! تیرے دین و ملت والوں میں سے جو غازی ان سے آمادۂجنگ ہو یا تیرے طریقہ کی پیروی کرنے والوں میں سے جو مجاہد قصد جہاد کرے، اس غرض سے کہ تیرا دین بلند، تیرا گروہ قوی اور تیرا حصہ و نصیب کامل تر ہو تو اس کے لیے آسانیاں پیدا کر۔ تکمیل کار کے سامان فراہم کر۔ اس کی کامیابی کا ذمہ لے۔ اس کے لیے بہترین ہمراہی انتخاب فرما۔ قوی و مضبوط سواری کا بندوبست کر۔ ضروریات پورا کرنے کے لیے وسعت و فراخی دے۔ دل جمعی و نشاط خاطر سے بہرہ مند فرما۔ اس کے اشتیاق ( وطن) کا ولولہ ٹھنڈا کر دے ، تنہائی کے غم کا اسے احساس نہ ہونے دے۔ زن و فرزند کی یاد اسے بھلادے، قصد خیر کی طرف رہنمائی فرما۔ اس کی عافیت کا ذمہ لے ، سلامتی کو اس کا ساتھی قرار دے، بزدلی کو اس کے پاس نہ پھٹکنے دے، اس کے دِل میں جرأت پیدا کر۔ زور و قوت اسے عطا فرما، اپنی مدد گاری سے اسے توانائی بخش۔ راہ و روش ( جہاد ) کی تعلیم دے اور حکم میں صحیح طریق کار کی ہدایت فرما، ریاو نمود کو اس سے دور رکھ، ہوس شہرت کا کوئی شائبہ اس میں نہ رہنے دے۔ اس کے ذکر و فکر اور سفر وقیام کو اپنی راہ میں اور اپنے لیے قرار دے اور جب وہ تیرے دشمنوں اور اپنے دشمنوں سے مدمقابل ہو تو اس کی نظروں میں ان کی تعداد تھوڑی کرکے دکھا، اس کے دل میں ان کے مقام و منزلت کر پست کر دے۔ اسے ان پر غلبہ دے اور ان کواس پر غالب نہ ہونے دے۔ اگر تو نے اس مرد مجاہد کے خاتمہ بالخیر اور شہادت کا فیصلہ کر دیا ہے تو یہ شہادت اس وقت واقع ہو جب وہ تیرے دشمنوں کو قتل کر کے کیفر کردار تک پہنچا دے یا اسیری انہیں بے حال کر دے اور مسلمانوں کے اطراف مملکت میں امن برقرار ہوجائے اور دشمن پیٹھ پھرا کر چل دے۔
بارالٰہا! وہ مسلمان جو کسی مجاہد یا نگہبان سرحدکے گھر کا نگران ہو یا اس کے اہل و عیال کی خبر گیری کرے یا تھوڑی بہت مالی اعانت کرے یا آلات جنگ سے مدد دے یا جہاد پر ابھارے یا اس کے مقصد کے سلسلہ میں دعائے خیر کرے یا اس کے پس پشت اس کی عزّت و ناموس کا خیال رکھے تو اسے بھی اس کے اجر کے برابر بے کم و کاست اجر اور اس کے عمل کا ہاتھوں ہاتھ بدلہ دے جس سے وہ اپنے پیش کئے ہوئے عمل کا نفع اور اپنے بجا لائے ہوئے کام کی مسرت دنیا میں فوری طور سے حاصل کرلے۔ یہاں تک کہ زندگی کی ساعتیں اسے تیرے فضل و احسان کی اس نعمت تک جو تو نے اس کے لیے جاری کی ہے اور عزت و کرامت تک جو تو نے اس کے لیے مہیا کی ہے، پہنچا دیں۔
پروردگار! جس مسلمان کو اسلام کی فکر پریشان اور مسلمانوں کے خلاف مشرکوں کی جتھہ بندی غمگین کرے، اس حد تک کہ وہ جنگ کی نیت اور جہاد کا ارادہ کرے مگر کمزوری اسے بٹھا دے یا بے سروسامانی اسے قدم نہ اٹھانے دے یا کوئی حادثہ اس مقصد سے تاخیر میں ڈال دے یا کوئی مانع اس کے ارادہ میں حائل ہوجائے تو اس کا نام عبادت گزاروں میں لکھ اور اسے مجاہدوں کا ثواب عطا کر اور اسے شہیدوں اور نیکوکاروں کے زمرہ میں شمار فرما۔
اے اللہ! محمد پر جو تیرے عبد خاص اور رسول ہیں اور ان کی اولاد پر ایسی رحمت نازل فرما جو شرف و رتبہ میں تمام رحمتوں سے بلند تر اور تمام درودوں سے بالاتر ہو۔ ایسی رحمت جس کی مدت اختتام پذیر نہ ہو، جس کی گنتی کا سلسلہ کہیں قطع نہ ہو۔ ایسی کامل و اکمل رحمت جو تیرے دوستوں میں سے کسی ایک پر ناز ل ہوئی ہو اس لیے کہ تو عطا و بخشش کرنے والا، ہر حال میں قابل ستائش ، پہلی دفعہ پیدا کرنے والا اور دوبارہ زندہ کرنے والا اور جو چاہے وہ کرنے والا ہے۔

 

 

 

فہرست صحیفہ کاملہ