Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، تمہاری خندہ پیشانی، تمہاری ذاتی شرافت کی دلیل ہوتی ہے۔ مستدرک الوسائل حدیث9980

مفاتیح الجنان و باقیات الصالحات (اردو)

چوتھی قسم

ماہ رمضان میں دنوں کے اعمال

ان میں چند امور ہیں:

﴿۱﴾شیخ و سید سے منقول یہ دعا ہر روز پڑھے:

اَللّٰھُمَّ ہذَا شَھْرُ رَمَضانَ الَّذِی ٲَنْزَلْتَ فِیہِ الْقُرْآنَ ھُدیً لِلنَّاسِ وَبَیِّناتٍ مِنَ الْھُدی

اے معبود!یہ رمضان کا مہینہ ہے کہ جس میں تو نے قرآن پاک اتارا جو لوگوں کے لیے رہنما ہے اس میں ہدایت کی دلیلیں اور حق و

وَالْفُرْقانِ، وَہذَا شَھْرُ الصِّیامِ، وَہذَا شَھْرُ الْقِیامِ وَہذَا شَھْرُ الْاِنابَۃِ، وَہذَا شَھْرُ

باطل کا فرق واضح ہے یہ روزے رکھنے کا مہینہ ہے یہ راتوں کی عبادت کا مہینہ ہے اور یہ خداکی طرف واپسی کا مہینہ ہے یہ توبہ

التَّوْبَۃِ، وَہذَا شَھْرُ الْمَغْفِرَۃِ وَالرَّحْمَۃِ وَہذَا شَھْرُ الْعِتْقِ مِنَ النَّارِ وَالْفَوْزِ بِالْجَنَّۃِ

قبول ہونے کا مہینہ ہے یہ بخشے جانے اور رحمت نازل ہونے کا مہینہ ہے یہ جہنم سے رہائی پانے اور جنت میں جانے کی کامیابی کا

وَہذَا شَھْرٌ فِیہِ لَیْلَۃُ الْقَدْرِ الَّتِی ھِیَ خَیْرٌ مِنَ ٲَ لْفِ شَھْرٍ ۔ اَللّٰھُمَّ فَصَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ

مہینہ ہے اور یہ وہ مہینہ ہے کہ اس میں شب قدر ہے کہ جو ایک ہزار مہینوں سے بہتر ہے پس اے معبود! محمد(ص) اور آل محمد(ص) پر

وَآلِ مُحَمَّدٍ وَٲَعِنِّی عَلَی صِیامِہِ وَقِیامِہِ، وَسَلِّمْہُ لِی وَسَلِّمْنِی فِیہِ، وَٲَعِنِّی عَلَیْہِ

رحمت نازل فرما اور اس ماہ کے روزے رکھنے اور عبادت میں میری مدد فرما اسے میرے لیے پورا کراور مجھے اس میں سلامت رکھ

بِٲَفْضَلِ عَوْ نِکَ، وَوَفِّقْنِی فِیہِ لِطاعَتِکَ وَطاعَۃِ رَسُو لِکَ وَٲَوْ لِیائِکَ صَلَّی اللّهُ

اور اس ماہ میں میری بہترین مدد فرما اس میں اپنی بندگی نیز اپنے رسول(ص) اور اپنے دوستوں کی پیروی کی توفیق دے

عَلَیْھِمْ، وَفَرِّغْنِی فِیہِ لِعِبادَتِکَ وَدُعائِکَ وَتِلاوَۃِ کِتابِکَ، وَٲَعْظِمْ لِی فِیہِ الْبَرَکَۃَ

رحمت خدا ہو ان پر اور اس مہینے میں اپنی عبادت کرنے دعا مانگنے اور تلاوت قرآن کا موقع دے اس ماہ میں مجھے بہت زیادہ برکت دے

وَٲَحْسِنْ لِی فِیہِ الْعافِیَۃَ، وَٲَصِحَّ فِیہِ بَدَنِی، وَٲَوْسِعْ فِیہِ رِزْقِی، وَاکْفِنِی فِیہِ مَا

مجھے بہتر سے بہتر آسائش عطا فرما میرے بدن کو سلامت رکھ میرے رزق میں وسعت دے اس ماہ میں میری پریشانی میں مددگار

ٲَھَمَّنِی، وَاسْتَجِبْ فِیہِ دُعائِی، وَبَلِّغْنِی فِیہِ رَجائِی ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ

بن میری دعا کو شرف قبولیت عطا فرما اور میری امید پوری کر اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت

مُحَمَّدٍ وَٲَذْھِبْ عَنِّی فِیہِ النُّعاسَ وَالْکَسَلَ وَالسَّٲْمَۃَ وَالْفَتْرَۃَ وَالْقَسْوَۃَ وَالْغَفْلَۃَ

نازل فرما اور اس مہینے میں مجھ سے اونگھ، سستی، چڑچڑاہٹ ،سستی سنگ دلی، بے خبری اور فریب کو مجھ سے

وَ الْغِرَّۃَ وَجَنِّبْنِی فِیہِ الْعِلَلَ وَالْاَسْقامَ وَالْھُمُومَ وَالْاَحْزانَ وَالْاَعْراضَ وَالْاَمْراضَ

دور رکھ اور اس مہینے میں دردوں بیماریوں پریشانیوں غموں دکھوں بیماریوں خطاؤں اور گناہوں

وَالْخَطایا وَالذُّنُوبَ، وَاصْرِفْ عَنِّی فِیہِ السُّوئَ وَالْفَحْشائَ وَالْجَھْدَ وَالْبَلائَ وَالتَّعَبَ

سے مجھے بچائے رکھ اور اس مہینے میں مجھ سے ہر برائی بے حیائی، رنج، کٹھن، سختی اور بے دلی

وَالْعَنائَ إنَّکَ سَمِیعُ الدُّعائِ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَٲَعِذْنِی فِیہِ مِنَ

دور کردے بے شک تو دعا کا سننے والا ہے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور اس ماہ میں مجھے دھتکارے ہوئے

الشَّیْطانِ الرَّجِیمِ وَھَمْزِھِ وَلَمْزِھِ وَنَفْثِہِ وَنَفْخِہِ وَوَسْوَسَتِہِ وَتَثْبِیطِہِ وَبَطْشِہِ

شیطان سے پناہ دے اور اس کے اشارے، سرگوشی اس کے منتر اس کی پھونک اس کے برے خیال رکاوٹ

وَکَیْدِھِ وَمَکْرِھِ وَحَبائِلِہِ وَخُدَعِہِ وَٲَمانِیِّہِ وَغُرُورِھِ وَفِتْنَتِہِ وَشَرَکِہِ وَٲَحْزابِہِ

داؤ بناوٹ اور اس کے پھندے، دھوکے، آرزو، بھلاوے، بہکاوے اور اس کے جالوں، ٹولیوں،

وَٲَتْباعِہِ وَٲَشْیاعِہِ وَٲَوْ لِیائِہِ وَشُرَکائِہِ وَجَمِیعِ مَکائِدِھِ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ

پیروکاروں، ساتھیوں، دوستوں اور اس کے ہمکاروں اور اس کے دھوکوں سے پناہ دے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر

وَآلِ مُحَمَّدٍ وَارْزُقْنا قِیامَہُ وَصِیامَہُ وَبُلُوغَ الْاَمَلِ فِیہِ وَفِی قِیامِہِ وَاسْتِکْمالَ مَا

رحمت نازل فرما اور ہمیں اس ماہ میں نماز روزہ نصیب فرما اور اس میں امید پوری فرما اور اس ماہ میں عبادت کرنے کی کمال حد جس

یُرْضِیکَ عَنِّی صَبْراً وَاحْتِساباً وَ إیماناً وَیَقِیناً، ثُمَّ تَقَبَّلْ ذلِکَ مِنِّی بِالْاَضْعافِ

میں تو مجھ سے راضی ہو اس میں مجھے برداشت خوش رفتاری ایمان اور یقین عطا فرما پھر اسے میری طرف سے قبول فرما

الْکَثِیرَۃِ، وَالْاَجْرِ الْعَظِیمِ، یَا رَبَّ الْعالَمِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ

کئی گنا بڑھا کر اور اس پر بہت بڑا اجر دے اے جہانو ںکے پالنے والے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما

وَارْزُقْنِی الْحَجَّ وَا لْعُمْرَۃَ وَالْجِدَّ وَالاجْتِہادَ وَالْقُوَّۃَ وَالنَّشاطَ وَالْاِنابَۃَ وَالتَّوْبَۃَ

اور نصیب فرما مجھے حج و عمرہ، کوشش، طاقت، جوش،

وَالتَّوْفِیقَ وَالْقُرْبَۃَ وَالْخَیْرَ الْمَقْبُولَ وَالرَّغْبَۃَ وَالرَّھْبَۃَ وَالتَّضَرُّعَ وَالْخُشُوعَ وَالرِّقَّۃَ

بازگشت، توبہ، تقرب، پسندیدہ نیکی، چاہت، ڈر، عاجزی، فروتنی، نرمی،

وَالنِّیَّۃَ الصّادِقَۃَ، وَصِدْقَ اللِّسانِ، وَالْوَجَلَ مِنْکَ، وَالرَّجائَ لَکَ، وَالتَّوَکُّلَ عَلَیْکَ،

اور کھری نیت رکھنے اور سچ بولنے کی توفیق دے اور یوں کر کہ میں تجھ سے ڈروں تجھ سے امید رکھوں تجھ پر بھروسہ کروں

وَالثِّقَۃَ بِکَ، وَالْوَرَعَ عَنْ مَحارِمِکَ مَعَ صالِحِ الْقَوْلِ، وَمَقْبُولِ السَّعْیِ ، وَمَرْفُوعِ

اور تجھے سہارا بناؤں اور تیری حرام کردہ چیزوں سے پرہیز کروں اس کے ساتھ بات میں نرمی ہو کوشش قبول ہو کردار

الْعَمَلِ وَمُسْتَجابِ الدَّعْوَۃِ وَلاَ تَحُلْ بَیْنِی وَبَیْنَ شَیْئٍ مِنْ ذلِکَ بِعَرَضٍ وَلاَ مَرَضٍ

بلند ہو اور میری ہر دعا مقبول بارگاہ ہو اور میرے اور ان چیزوں کے درمیان کوئی رکاوٹ نہ آنے دے جیسے دکھ بیماری

وَلاَ ھَمٍّ وَلاَ غَمٍّ وَلاَ سُقْمٍ وَلاَ غَفْلَۃٍ وَلاَ نِسْیانٍ، بَلْ بِالتَّعاھُدِ وَالتَّحَفُّظِ لَکَ وَفِیکَ

پریشانی رنج نقص بے خبری اور فراموشی و غیرہ بلکہ ان عبادتوں میں تیری طرف سے توفیق و حفاظت ہو تیرے لیے ان پر کاربند

وَالرِّعایَۃِ لِحَقِّکَ وَالْوَفائِ بِعَھْدِکَ وَوَعْدِکَ بِرَحْمَتِکَ یَا ٲَرْحَمَ الرّاحِمِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ

رہوں تیرے حق کا لحاظ کروں اور تو اپنا پیمان اور اپنا وعدہ پورا فرمائے الٰہی اپنی رحمت سے اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے اے

صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَاقْسِمْ لِی فِیہِ ٲَفْضَلَ مَا تَقْسِمُہُ لِعِبادِکَ الصَّالِحِینَ

معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور اس ماہ میں تو نے جو حصہ اپنے نیک بندوں کیلئے رکھا ہے مجھے اس میں سے زیاد

وَٲَعْطِنِی فِیہِ ٲَ فْضَلَ مَا تُعْطِی ٲَوْ لِیائَکَ الْمُقَرَّبِینَ مِنَ الرَّحْمَۃِ وَالْمَغْفِرَۃِ وَالتَّحَنُّنِ

اور اس مہینے میں تو نے اپنے قریبی دوستوں کو جو کچھ عطا کیا ہے اس میں سے مجھے زیادہ حصہ دے یعنی رحمت ،بخشش، محبت،

وَالْاِجابَۃِ وَالْعَفْوِ وَالْمَغْفِرَۃِ الدَّائِمَۃِ وَالْعافِیَۃِ وَالْمُعافاۃِ وَالْعِتْقِ مِنَ النَّارِ وَالْفَوْزِ

قبولیت اور درگزر نیز ہمیشہ کے لیے بخشش آرام، آسودگی اور آگ سے خلاصی جنت میں جانے کی

بِالْجَنَّۃِ وَخَیْرِ الدُّنْیا وَالْآخِرَۃِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَاجْعَلْ دُعائِی

کامیابی اور دنیا و آخرت کی بھلائی میں زیادہ حصہ دے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور اس مہینے میں میری

فِیہِ إلَیْکَ واصِلاً، وَرَحْمَتَکَ وَخَیْرَکَ إلَیَّ فِیہِ نازِلاً، وَعَمَلِی فِیہِ مَقْبُولاً، وَسَعْیِی

کہ تجھ تک پہنچ جائے اور تیری رحمت اور بھلائی ا س میں مجھ پر نازل ہو اور اس ماہ میں میرا عمل تجھے قبول میری کوشش

فِیہِ مَشْکُوراً وَذَ نْبِی فِیہِ مَغْفُوراً حَتّی یَکُونَ نَصِیبِی فِیہِ الْاَکْثَرُ وَحَظِّی فِیہِ الْاَوْفَرُ

تجھے پسند اور اس میں تو میرا گناہ بخش دے یہاں تک کہ اس ماہ میں میرا نصیب بڑھ جائے اور میرا حصہ زیادہ ہوجائے

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَوَفِّقْنِی فِیہِ لِلَیْلَۃِ الْقَدْرِ عَلَی ٲَفْضَلِ حالٍ

اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور اس ماہ میں مجھے شب قدر سے بہرہ ور فرما اس بہترین صورت

تُحِبُّ ٲَنْ یَکُونَ عَلَیْہا ٲَحَدٌ مِنْ ٲَوْ لِیائِکَ وَٲَرْضاہا لَکَ، ثُمَّ اجْعَلْہا لِی خَیْراً مِنْ

میں جسے تو پسند کرے کہ تیرے دوستوں میں سیہر ایک اسی حال میں ہو جو تیرے لیے بہت پسندیدہ ہے پھر شب قدر کو میرے لیے

ٲَلْفِ شَھْرٍ، وَارْزُقْنِی فِیہا ٲَ فْضَلَ مَا رَزَقْتَ ٲَحَداً مِمَّنْ بَلَّغْتَہُ إیَّاہا وَٲَکْرَمْتَہُ بِہا

ہزار مہینوں سے بہتر قرار دے اور اس میں وہ بہترین روزی دے جو تو نے کسی شخص کو دی اور وہ استک پہنچائی اور یوں اسکو سرفراز کی

وَاجْعَلْنِی فِیہا مِنْ عُتَقائِکَ مِنْ جَھَنَّمَ وَطُلَقائِکَ مِنَ النَّارِ وَسُعَدائِ خَلْقِکَ بِمَغْفِرَتِکَ

ہے مجھے اس میں جہنم سے آزاد کیے گئے لوگوں میں قرار دے کہ جو آگ سے خلاصی پاگئے ہیں اور تیری بخشش و خوشنودی کے ساتھ

وَرِضْوانِکَ یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَارْزُقْنا فِی

تیری مخلوق میں سے خوش بخت ہیں اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور ہمیں اس ما

شَھْرِنا ھذَا الْجِدَّ وَالاجْتِھادَ وَالْقُوَّۃَ وَالنَّشاطَ وَمَا تُحِبُّ وَتَرْضی اَللّٰھُمَّ رَبَّ الْفَجْرِ

رمضان میں نصیب کر سعی، کوشش، طاقت ولولہ اور وہ چیز جسے تو چاہے اور پسند کرے اے اللہ! اے ایک صبح

وَلَیالٍ عَشْرٍ وَالشَّفْعِ وَالْوَتْرِ وَرَبَّ شَھْرِ رَمَضانَ وَمَا ٲَنْزَلْتَ فِیہِ مِنَ الْقُرْآنِ وَرَبَّ

اور دس راتوں اور شفع و وتر کے رب اور ماہ رمضان کے مالک اور اس قرآن کے مالک جو تو نے اس ماہ میں نازل کیا

جَبْرَائِیلَ وَمِیکائِیلَ وَ إسْرافِیلَ وَعِزْرائِیلَ وَجَمِیعِ الْمَلائِکَۃِ الْمُقَرَّبِینَ وَرَبَّ إبْراھِیمَ

اور جبرائیل(ع) و میکائیل(ع) و اسرافیل(ع) و عزرائیل(ع) اور تمام مقرب فرشتوں کے رب اور اے حضرت ابراہیم(ع)

وَ إسْمعِیلَ وَ إسْحقَ وَیَعْقُوبَ وَرَبَّ مُوسی وَعِیسی وَجَمِیعِ النَّبِیِّینَ وَالْمُرْسَلِینَ

و اسماعیل(ع) و اسحاق(ع) و یعقوب(ع) کے رب اور حضرت موسیٰ(ع) و عیسیٰ (ع)اور سارے نبیوں اور رسولوں کے رب اور اے نبیوں کے خاتم

وَرَبَّ مُحَمَّدٍ خاتَمِ النَّبِیِّینَ صَلَواتُکَ عَلَیْہِ وَعَلَیْھِمْ ٲَجْمَعِینَ، وَٲَسْٲَ لُکَ بِحَقِّکَ

محمد(ص) کے رب ان پر اور سب پہلے نبیوں پر تیری رحمتیں ہوں میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیرے حق کے واسطے سے جوان پر ہے، اور

عَلَیْھِمْ وَبِحَقِّھِمْ عَلَیْکَ وَبِحَقِّکَ الْعَظِیمِ لَمَّا صَلَّیْتَ عَلَیْہِ وَآلِہِ وَعَلَیْھِمْ ٲَجْمَعِینَ

انکے حق کے واسطے سے جو تجھ پر ہے اور تیرے بزرگتر حق کے واسطے سے کہ ضرور ان پر اور انکی آل پررحمت کر اور ان سب پر رحمت کر

وَنَظَرْتَ إلَیَّ نَظْرَۃً رَحِیمَۃً تَرْضی بِھا عَنِّی رِضیً لاَ سَخَطَ عَلَیَّ بَعْدَہُ ٲَبَداً

اور مجھ پر ایسی نظر فرما جو مہربانی کی نظر ہو کہ تو مجھ سے ایسا راضی ہوجائے اور اس کے بعد کبھی ناراض نہ ہو

وَٲَعْطَیْتَنِی جَمِیعَ سُؤْلِی وَرَغْبَتِی وَٲُمْنِیَتِی وَ إرادَتِی وَصَرَفْتَ عَنِّی مَا ٲَکْرَھُ

اور میری تمام مرادیں خواہشیں آرزوئیں اور ارادے پورے فرما وہ چیزیں مجھ سے دور کردے جن سے میں اپنی جان کیلئے ڈرتا

وَٲَحْذَرُ وَٲَخافُ عَلَی نَفْسِی وَمَا لاَ ٲَخافُ وَعَنْ ٲَھْلِی وَمالِی وَ إخْوانِی وَذُرِّیَّتِی

اور خوف کھاتا ہوں اور خوف نہیں کھاتااور انہیں میرے رشتہ داروں میرے مال میرے بھائیوں اور اولاد سے بھی دور فرما

اَللّٰھُمَّ إلَیْکَ فَرَرْنا مِنْ ذُ نُوبِنا فَآوِنا تائِبِینَ، وَتُبْ عَلَیْنا مُسْتَغْفِرِینَ، وَاغْفِرْ لَنا

اے معبود! ہم اپنے گناہوں سے تیری طرفبھاگے ہیں ہمیں توبہ کرنیوالوں کی سی پناہ دے اور توجہ کر کہ ہم بخشش کے طالب ہیں

مُتَعَوِّذِینَ، وَٲَعِذْنا مُسْتَجِیرِینَ، وَٲَجِرْنا مُسْتَسْلِمِینَ، وَلاَ تَخْذُلْنا راھِبِینَ،

لے ہیں ہم خواہاں ہیں امان ہمیں بخش دے پناہ دیتے ہوئے پناہ دے کہ طالب پناہ ہیں ہمیں پناہ میں لے کہ سرنگوں ہیں ہمیں رسوا

وَآمِنَّا راغِبِینَ، وَشَفِّعْنا سائِلِینَ، وَٲَعْطِنا إنَّکَ سَمِیعُ الدُّعائِ قرِیبٌ مُجِیبٌ ۔

نہ کر کہ ڈرنے وادے ہم سائل ہیں شفاعت قبول فرما اور حاجت پوری کر بے شک تو دعا سننے والا ہے قریب تر قبول کرنے والا ہے

اَللّٰھُمَّ ٲَنْتَ رَبِّی وَٲَ نَا عَبْدُکَ وَٲَحَقُّ مَنْ سَٲَلَ الْعَبْدُ رَبَّہُ وَلَمْ یَسْٲَلِ

اے معبود! تو میرا پروردگار اور میں تیرا بندہ ہوں اور بندے کو زیادہ حق ہے کہ اپنے پروردگار سے سوال کرے اور بندوں سے تیرے

الْعِبادُ مِثْلَکَ کَرَماً وَجُوداً یَا مَوْضِعَ شَکْوَی السَّائِلِینَ وَیَا مُنْتَہی حاجَۃِ الرَّاغِبِینَ

جیسے کرم و بخشش کا سوال نہیں کیا جاسکتا اے سائلوں کے لیے مرکز شکایت اور اے محتاجوں کی حاجت برآری کی آخری امیدگاہ

وَیَا غِیاثَ الْمُسْتَغِیثِینَ، وَیَا مُجِیبَ دَعْوَۃِ الْمُضْطَرِّینَ، وَیَا مَلْجَٲَ الْہارِبِینَ، وَیَا

اے فریاد کرنے والوں کے فریادرس اے بے چاروں کی دعائیں قبول کرنے والے اے بھاگنے والوں کی جائے پناہ

صَرِیخَ الْمُسْتَصْرِخِینَ، وَیَا رَبَّ الْمُسْتَضْعَفِینَ، وَیَا کاشِفَ کَرْبِ الْمَکْرُوبِینَ،

اے چیخ و پکار کرنے والوں کے مددگار اور ایزیردستوں کے پروردگار اے دکھی لوگوں کے دکھ دور کرنے والے

وَیَا فارِجَ ھَمِّ الْمَھْمُومِینَ، وَیَا کاشِفَ الْکَرْبِ الْعَظِیمِ، یَا اللّهُ یَا رَحْمنُ یَا رَحِیمُ

اے پریشانوں کی پریشانی ہٹانے والے اور اے بڑی مصیبت کے دور کرنے والے یا اللہ اے رحم کرنے والے اے مہربان

یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَاغْفِرْ لِی ذُ نُوبِی وَعُیُوبِی

اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے محمد(ص) وآل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور بخش دے میرے گناہ میرے عیب

وَ إسائَتِی وَظُلْمِی وَجُرْمِی وَ إسْرافِی عَلَی نَفْسِی وَارْزُقْنِی مِنْ فَضْلِکَ وَرَحْمَتِکَ

میری برائیاں میری ناانصافی میرا جرم اور اپنے نفس پر میری زیادتی اور مجھ پر اپنا فضل و کرم اور رحمت فرما

فَ إنَّہُ لاَ یَمْلِکُہا غَیْرُکَ، وَاعْفُ عَنِّی، وَاغْفِرْ لِی کُلَّ مَا سَلَفَ مِنْ ذُنُوبِی، وَاعْصِمْنِی

کیونکہ تیرے سوا کسی کو یہ اختیار نہیں اور مجھے معاف فرما اور میرے گزشتہ گناہ معاف کردے اور بقایا زندگی میں

فِیما بَقِیَ مِنْ عُمْرِی وَاسْتُرْ عَلَیَّ وَعَلَی والِدَیَّ وَوَلَدِی وَقَرابَتِی وَٲَھْلِ حُزانَتِی

مجھے گناہ سے بچائے رکھاور میری میرے والدین کی میری اولاد اور عزیزوں کی میرے ملنے والوں کی اور مومنین

وَمَنْ کانَ مِنِّی بِسَبِیلٍ مِنَ الْمُؤْمِنِینَ وَالْمُؤْمِناتِ فِی الدُّنْیا وَالاَْخِرَۃِ فَ إنَّ ذلِکَ کُلَّہُ

و مومنات میں سے جو میرے ہمقدم ہیں ان سب کی دنیا اور آخرت میں پردہ پوشی فرماکیونکہ یہ باتکلی طور پر تیرے اختیار میں ہے

بِیَدِکَ وَٲَ نْتَ واسِعُ الْمَغْفِرَۃِ فَلا تُخَیِّبْنِی یَا سَیِّدِی، وَلاَ تَرُدَّ دُعائِی وَلاَ یَدِی إلی

اور تو بخش دینے میں وسعت والا ہے پس ناامید نہ کر میرے آقا! میری دعا رد نہ کر اور میرا ہاتھ میرے سینے

نَحْرِی حَتّی تَفْعَلَ ذلِکَ بِی وَتَسْتَجِیبَ لِی جَمِیعَ مَا سَٲَلْتُکَ وَتَزِیدَنِی مِنْ

کی طرف نہ پلٹا یہاں تک کہ مجھے وہ سب کچھ دے اور میری سب حاجتیں پوری کردے جو میں نے طلب کیں اور اپنے فضل سے

فَضْلِکَ، فَ إنَّکَ عَلَی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیرٌ، وَنَحْنُ إلَیْکَ راغِبُونَ ۔ اَللّٰھُمَّ لَکَ الْاَسْمائُ

مجھے کچھ زیادہ بھی دے کہ بے شک تو ہر چیز پر قدرت رکھتا ہیاور ہم تیری ہی طرف رغبت کرتے ہیں اے معبود! تیرے لیے اچھے

الْحُسْنی، وَالْاَمْثالُ الْعُلْیا، وَالْکِبْرِیَائُ وَالاَْلائُ، ٲَسْٲَ لُکَ بِاسْمِکَ بِسْمِ اللّهِ الرَّحْمنِ

اچھے نام ہیں اور بلندترین شانیں ہیں بڑائیاں اور نعمتیں ہیں میں سوال کرتا ہوں تجھ سے بواسطہ تیرے نام ﴿اللہ، رحمن،

الرَّحِیمِ إنْ کُنْتَ قَضَیْتَ فِی ہذِھِ اللَّیْلَۃِ تَنَزُّلَ الْمَلائِکَۃِ وَالرُّوحِ فِیہا ٲَنْ تُصَلِّیَ

رحیم﴾ کے اگر تو نیاس رات میں ملائکہ اور روح کو زمین پر اتارنے کا فیصلہ کر رکھا ہے تو اس رات

عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ، وَٲَنْ تَجْعَلَ اسْمِی فِی السُّعَدائِ، وَرُوحِی مَعَ الشُّھَدائِ،

محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور یہ کہ میرا نام نیک بختوں میں میری روح کو شہیدوں کے ساتھ میری نیکی کو درجہ علیین

وَ إحْسانِی فِی عِلِّیِّینَ، وَ إسَائَتِی مَغْفُورَۃً، وَٲَنْ تَھَبَ لِی یَقِیناً تُباشِرُ بِہِ قَلْبِی،

اور میرے گناہوں کو بخشے ہوئے قرار دے اور یہ کہ مجھے وہ یقین دے جو میرے دل میں جما رہے

وَ إیماناً لاَ یَشُوبُہُ شَکٌّ، وَرِضیً بِما قَسَمْتَ لِی، وَآتِنِی فِی الدُّنْیا حَسَنَۃً وَفِی

وہ ایمان عطا کر جسے شک کا خطرہ نہ ہو جو کچھ تو نے دیا اس پر راضی رکھ مجھے اس دنیا میں نیکی اور

الْآخِرَۃِ حَسَنَۃً وَقِنِی عَذابَ النّارِ وَ إنْ لَمْ تَکُنْ قَضَیْتَ فِی ہذِھِ اللَّیْلَۃِ تَنَزُّلَ

آخرت میں خوشی نصیب فرما اور مجھے آگ کے عذاب سے بچائے رکھاور اگر تو نے آج کی رات میں ملائکہ اور روح کو نازل کرنے

الْمَلائِکَۃِ وَالرُّوْحِ فِیہا فَٲَخِّرْنِی إلی ذلِکَ وَارْزُقْنِی فِیہا ذِکْرَکَ وَشُکْرَکَ وَطاعَتَکَ

کا فیصلہ نہیں کیا تو پھر مجھ کو ایسی رات تک مہلت دے اور اس میں مجھے اپنے ذکر، شکر فرمانبرداری اور بہترین

وَحُسْنَ عِبادَتِکَ وَصَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ بِٲَفْضَلِ صَلَواتِکَ یَا ٲَرْحَمَ الرّاحِمِینَ

عبادت کی توفیق دے اور محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اپنی بہترین رحمتوں سے اے سب سے زیادہ رحم کرنے والا

یَا ٲَحَدُ یَا صَمَدُ یَا رَبَّ مُحَمَّدٍ اغْضَبِ الْیَوْمَ لِمُحَمَّدٍ وَ لاِبْرارِ عِتْرَتِہِ وَاقْتُلْ ٲَعْدائَھُمْ

اے یگانہ اے بے نیاز اے ربِ محمد(ص)! آج غضبناک ہو محمد(ص) اور ان کے خاندان کے نیکوکارں کی خاطر اور ان کے دشمنوں کے ٹکڑے

بَدَداً، وَٲَحْصِھِمْ عَدَداً، وَلاَ تَدَعْ عَلَی ظَھْرِ الْاَرْضِ مِنْھُمْ ٲَحَداً، وَلاَ تَغْفِرْ لَھُمْ ٲَبَداً

ٹکڑے کردے انہیں ایک ایک کرکے چن لے اور ان میں سے کسی کو روئے زمین پر زندہ نہ چھوڑ انہیں کبھی بھی معاف نہ فرما

یَا حَسَنَ الصُّحْبَۃِ، یَا خَلِیفَۃَ النَّبِیِّینَ ٲَ نْتَ ٲَرْحَمُ الرَّاحِمِینَ، الْبَدِیئُ الْبَدِیعُ الَّذِی

اے بہترین رفیق اینبیوں کے بعدباقی رہنے والے تو سب سے زیادہ رحم کرنے والا ہے ایسا آغاز کرنیوالا ہے پیدا کرنیوالا ہے کہ

لَیْسَ کَمِثْلِکَ شَیْئٌ، وَالدَّائِمُ غَیْرُ الْغافِلِ، وَالْحَیُّ الَّذِی لاَ یَمُوتُ، ٲَ نْتَ کُلَّ یَوْمٍ

کوئی بھی چیز تیرے جیسی نہیں ہے اے ہمیشہ کے بیدار جو غافل نہیں ہوتا اور وہ زندہ جسے موت نہیں آتی تو وہ ہے جو ہر روز نرالی

فِی شَٲْنٍ، ٲَنْتَ خَلِیفَۃُ مُحَمَّدٍ، وَناصِرُ مُحمَّدٍ، وَمُفَضِّلُ مُحَمَّدٍ، ٲَسْٲَ لُکَ ٲَنْ تَنْصُرَ

شان رکھتا ہے تو حضرت محمد(ص) کا پشت پناہ ان کا مددگار اور ان کو فضیلت دینے والا ہیمیں سوالی ہوں تیرا کہ حضرت محمد(ص) کے وص

وَصِیَّ مُحَمَّدٍ وَخَلِیفَۃَ مُحَمَّدٍ وَالْقائِمَ بِالْقِسْطِ مِنْ ٲَوْصِیائِ مُحَمَّدٍ صَلَواتُکَ عَلَیْہِ

جانشین اور ان کے جانشینوں میں سے عدل و انصاف قائم کرنے والے کی مدد فرما اس پر اور ان سب پر تیری رحمتیں ہوں

وَعَلَیْھِمْ، اعْطِفْ عَلَیْھِمْ نَصْرَکَ، یَا لاَ إلہَ إلاَّ ٲَ نْتَ بِحَقِّ لاَ إلہَ إلاَّ ٲَ نْتَ صَلِّ عَلَی

ان سبھوں کی مددو نصرت فرما اے وہ کہ تیرے سوا کوئی معبود نہیں تیرے سوا کوئی معبود نہیں کے واسطے سے محمد(ص) و آل(ع)

مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَاجْعَلْنِی مَعَھُمْ فِی الدُّنْیا وَالاَْخِرَۃِ، وَاجْعَلْ عاقِبَۃَ ٲَمْرِی إلی

محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور مجھے دنیا اور آخرت میں انہی کے ساتھ قرار دے اور میری زندگی کو اپنی بخشش و رحمت

غُفْرانِکَ وَرَحْمَتِکَ یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ وَکَذلِکَ نَسَبْتَ نَفْسَکَ یا سَیِّدِی بِاللُّطْفِ

کے شمول پر ختم فرما اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے اور جیسا کہ اپنے آپ کو لطیف و مہربان کے نام سے موسوم کیا ہے میرے

بَلَی إنَّکَ لَطِیفٌ فَصَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَالْطُفْ بِی لِما تَشائُ اَللّٰھُمَّ صَلِّ

مالک ہاں بے شک تو مہربان ہے پس محمد(ص) و آل محمد(ص)پر رحمت نازل فرما اور جس پر چاہے لطف و کرم کر اے معبود! محمد(ص) وآل محم

عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَارْزُقْنِی الْحَجَّ وَالْعُمْرَۃَ فِی عامِنا ہذَا وَتَطَوَّلْ عَلَیَّ بِجَمِیعِ

پر رحمت نازل فرما اور نصیب فرمامجھے حج اور عمرہ کی ادائیگی اسی رواں سال میں اور مجھ پر عنایت کرتے ہوئے میری دنیا و آخرت

حَوائِجِی لِلاَْخِرَۃِ وَالدُّنْیا۔ پھر تین مرتبہ کہے: ٲَسْتَغْفِرُ اللّهَ رَبِّی وَ ٲَ تُوبُ إلَیْہِ إنَّ رَبِّی

کی تمام حاجتیںپوری فرما بخشش چاہتا ہوں خدا سے جو میرا رب ہے اور اس کے حضور توبہ کرتا ہوں بیشک

قَرِیبٌ مُجِیبٌ، ٲَسْتَغْفِرُ اللّهَ رَبِّی وَٲَ تُوبُ إلَیْہِ إنَّ رَبِّی

میرا رب نزدیک اور دعا قبول کرنیوالا ہے بخشش چاہتا ہوں خدا سے جو میرا رب ہے اور اس کے حضور توبہ کرتا ہوں بے شک میرا

رَحِیمٌ وَدُودٌ، ٲَسْتَغْفِرُ اللّهَ رَبِّی وَٲَتُوبُ إلَیْہِ إنَّہُ کانَ غَفَّاراً ۔

رب مہربان محبت والا ہے بخشش چاہتا ہوں خدا سے جو میرا رب ہے اور اس کے حضور توبہ کرتا ہوں کیونکہ وہ بہت بخشنے والا ہے

اَللّٰھُمَّ اغْفِرْ لِی إنَّکَ ٲَرْحَمُ الرَّاحِمِینَ، رَبِّ إنِّی عَمِلْتُ سُوئ اً وَظَلَمْتُ نَفْسِی

اے معبود! مجھے بخش دے بے شک تو سب سے زیادہ رحم کرنے والا ہے میرے رب میں نے برا عمل کیا اور اپنی جان پرظلم کیا

فَاغْفِرْ لِی إنَّہُ لاَ یَغْفِرُ الذُّنُوبَ إلاَّ ٲَ نْتَ ، ٲَسْتَغْفِرُ اللّهَ الَّذِی لاَ إلہَ إلاَّ ھُوَ الْحَیُّ

پس مجھے بخش دے کہ تیرے سوا کوئی گناہوں کا معاف کرنے والا نہیں بخشش چاہتاہوں اللہ سے جسکے سوا کوئی معبود نہیں وہی زندہ

الْقَیُّومُ الْحَلِیمُ الْعَظِیمُ الْکَرِیمُ الْغَفَّارُ لِلذَّنْبِ الْعَظِیمِ وَٲَ تُوبُ إلَیْہِ، اَسْتَغْفِرُ اللّهَ

پائندہ بردبار بڑائی والا مہربان بڑے سے بڑے گناہ کو بخش دینے والا ہے میں اسکے حضور توبہ کرتا ہوںاللہ سے بخشش چاہتا ہوں

إنَّ اللّهَ کانَ غَفُوراً رَحِیماً۔ اس کے بعد یہ پڑھے :اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ ٲَنْ تُصَلِّیَ عَلَی

بے شک اللہ ہے بخش دینے والا مہربان ہے اے اللہ!میں تجھ سے سوال کرتا ہوں کہ محمد(ص) وآل محمد(ص) پر

مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَٲَنْ تَجْعَلَ فِیما تَقْضِی وَتُقَدِّرُ مِنَ الْاَمْرِ الْعَظِیمِ الْمَحْتُومِ فِی

رحمت نازل فرما ور یہ کہ تو شب قدر میں جن بڑے اور یقینی امور کے بارے میں بست و کشاد کا حکم لگائے جو تیرے

لَیْلَۃِ الْقَدْرِ مِنَ الْقَضائِ الَّذِی لاَ یُرَدُّ وَلاَ یُبَدَّلُ ٲَنْ تَکْتُبَنِی مِنْ حُجَّاجِ بَیْتِکَ

ایسے فیصلے ہوں جن میںکسی طرح کا التوا اور تبدیلی واقع نہیں ہوتی ان کے ضمن میں مجھے اپنے بیت الحرام کعبہ کے ان حاجیوں میں

الْحَرامِ الْمَبْرُورِ حَجُّھُمُ الْمَشْکُورِ سَعْیُھُمُ الْمَغْفُورِ ذُنُوبُھُمُ الْمُکَفَّرِ عَنْھُمْ سَیِّئاتُھُمْ

لکھ دے جن کا حج قبول جن کی سعی پسندیدہ جن کے گناہ معاف شدہ اور جن کی خطائیں ان سے دور کردی گئی ہوں

وَٲَنْ تَجْعَلَ فِیما تَقْضِی وَتُقَدِّرُ ٲَنْ تُطِیلَ عُمْرِی، وَتُوَسِّعَ رِزْقِی، وَتُؤَدِّیَ عَنِّی

اور یہ کہ جن باتوں میں تو بست و کشاد کرے ان میں میری عمر کو طولانی میرے رزق میں فراوانی فرما اور میری طرف سے

ٲَمانَتِی وَدَیْنِی، آمِینَ رَبَّ الْعالَمِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ اجْعَلْ لِی مِنْ ٲَمْرِیَ فَرَجاً وَمَخْرَجَاً

امانتیں اور قرضے ادا کردے ایسا ہی ہو اے جہانوںکے پالنے والے اے اللہ! میرے معاملوں میں کشادگی اور سہولت قرار دے

وَارْزُقْنِی مِنْ حَیْثُ ٲَحْتَسِبُ وَمِنْ حَیْثُ لاَ ٲَحْتَسِبُ وَاحْرُسْنِی مِنْ حَیْثُ ٲَحْتَرِسُ

اور مجھے رزق دے جہاں سے مجھے توقع ہے اور جہاں سے مجھے اس کے ملنے کی توقع نہیں ہے اور میری حفاظت کر جہاں میں اپنی

وَمِنْ حَیْثُ لاَ ٲَحْتَرِسُ، وَصَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَسَلِّمْ کَثِیراً ۔

حفاظت کرسکوں اور جہاں اپنی حفاظت نہ کرسکوں اور محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور بہت زیادہ سلام ۔

﴿۲﴾بزرگوں کا فرمان ہے کہ ماہ رمضان میں ہر روز یہ تسبیحات پڑھے کہ یہ دس جز ہیں اور ہر جز میں دس مرتبہ سبحان اللہ آیا ہے:

﴿۱﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیَِ النَّسَمِ سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ

﴿۱﴾پاک ہے اللہ جاندوروں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہتمام موجودات میں جوڑے

کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی

بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو چیرنے والا

سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری، سُبْحانَ

پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے

اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ السَّمِیعِ الَّذِی لَیْسَ

اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ جو ایسا سننے والا ہے کہ اس سے

شَیْئٌ ٲَسْمَعَ مِنْہُ، یَسْمَعُ مِنْ فَوْقِ عَرْشِہِ مَا تَحْتَ سَبْعِ ٲَرَضِینَ، وَیَسْمَعُ مَا فِی

زیادہ سننے والا کوئی نہیںوہ اپنے عرش کی بلندیوں پر سات زمینوں کے نیچے کی آواز سنتا ہے اور خشکی و تری کی

ظُلُماتِ الْبَرِّ وَالْبَحْرِ، وَیَسْمَعُ الْاَنِینَ وَالشَّکْوی، وَیَسْمَعُ السِّرَّ وَٲَخْفی، وَیَسْمَعُ

تاریکیوں میں سے ہر آواز سنتا ہے وہ نالہ و شکایت سنتا ہے ڈھکی چھپی باتیں سنتا ہے اور دلوں میں

وَساوِسَ الصُّدُورِ، وَلاَ یُصِمُّ سَمْعَہُ صَوْتٌ ۔ ﴿ ۲ ﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیَِ النَّسَم

گزرنے والے خیالوں کو بھی سنتا ہے اور کوئی آواز اس کی سماعت کو ختم نہیں کرتی ﴿۲﴾پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنیوالا

سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ

پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہ تمام موجودات میںجوڑے بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کا

الظُّلُماتِ وَالنُّورِ سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ،

پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو چیرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا

سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ

پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ

رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ الْبَصِیرِ الَّذِی لَیْسَ شَیْئٌ ٲَبْصَرَ مِنْہُ، یُبْصِرُ مِنْ فَوْقِ

جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ جو ایسا دیکھنے والا ہے کہ اس سے زیادہ دیکھنے والا کوئی نہیں وہ اپنے عرش کے

عَرْشِہِ مَا تَحْتَ سَبْعِ ٲَرَضِینَ وَیُبْصِرُ مَا فِی ظُلُماتِ الْبَرِّ وَالْبَحْرِ لاَ تُدْرِکُہُ

اوپر سے وہ سب کچھ دیکھتا ہے جو سات زمینوں کے نیچے ہے وہ ان چیزوں کو دیکھتا ہے جو خشکی و تری کیتاریکیوں میں ہیں آنکھیں

الْاَبْصارُ، وَھُوَ یُدْرِکُ الْاَبْصارَ، وَھُوَ اللَّطِیفُ الْخَبِیرُ، وَلاَ تُغْشِی بَصَرَھُ الظُّلْمَۃُ،

اسے نہیں پاسکتیں اور وہ آنکھوں کو پالیتا ہے اور وہ باریک بین ہے خبردار تاریکی اسکی آنکھ کو ڈھانپ نہیں سکتی کوئی چھپی چیز ا

وَلاَ یُسْتَتَرُ مِنْہُ بِسِتْرٍ، وَلاَ یُوارِی مِنْہُ جِدارٌ، وَلاَ یَغِیبُ عَنْہُ بَرٌّ وَلاَ بَحْرٌ، وَلاَ یَکُنُّ

چھپ نہیں سکتی اور کوئی دیوار اس کے لیے پردہ نہیں بن پاتی صحرا اور دریا اس سے اوجھل نہیں ہوسکتے نہیں چھپاسکتا اس

مِنْہُ جَبَلٌ مَا فِی ٲَصْلِہِ وَلاَ قَلْبٌ مَا فِیہِ وَلاَ جَنْبٌ مَا فِی قَلْبِہِ وَلاَ یَسْتَتِرُ مِنْہُ صَغِیرٌ

سے کوئی پہاڑ جو کچھ اسکے نیچے ہے نہ کوئی دل کہ جو اس کے اندر ہے نہ کوئی پہلو کہ جو اس کے بیچ میںہے اور کوئی چھوٹی بڑی چیز

وَلاَ کَبِیرٌ، وَلاَ یَسْتَخْفِی مِنْہُ صَغِیرٌ لِصِغَرِھِ، وَلاَ یَخْفی عَلَیْہِ شَیْئٌ فِی الْاَرْضِ

سے اوجھل نہیں ہوسکتی کوئی چھوٹی چیز چھوٹائی کی وجہ سے اس سے چھپی نہیں رہتی اور نہ زمین اور آسمانوں میں کوئی چیز اس سے پنہا

وَلاَ فِی السَّمائِ، ھُوَ الَّذِی یُصَوِّرُکُمْ فِی الْاَرْحامِ کَیْفَ یَشائُ لاَ إلہَ إلاَّ ھُوَ الْعَزِیزُ

ہے وہ وہی تو ہے جس نے رحموں میں تمہاری صورت بنائی جیسے اس نیچاہی اس کے سوا کوئی معبود نہیںجو اقتدار والا

الْحَکِیمُ ۔ ﴿ ۳ ﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیَِ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ اللّهِ

حکمت والا ہے﴿۳﴾ پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنے والاپاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہ

خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ

تمام موجودات میں جوڑے بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور

الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ

بیج کو چیرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا

یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی

کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کاپالنے والا پاک ہے اللہ جو بوجھل بادلوں

یُنْشِیَُ السَّحابَ الثِّقالَ وَیُسَبِّحُ الرَّعْدُ بِحَمْدِھِ وَالْمَلائِکَۃُ مِنْ خِیفَتِہِ، وَیُرْسِلُ

کو پیدا کرتا ہے اور بجلی کی کڑک اس کی حمد کرتی ہے اور فرشتے خوف سے اس کی تسبیح پڑھتے ہیںوہ جلانے والی

الصَّواعِقَ فَیُصِیبُ بِہا مَنْ یَشائُ، وَیُرْسِلُ الرِّیاحَ بُشْراً بَیْنَ یَدَیْ رَحْمَتِہِ، وَیُنَزِّلُ

بجلیاں گراتا ہے اور جسے چاہے ان کا نشانہ بنادیتا ہے وہ ہواؤں کو بھیجتاہے جو اس کی رحمت کامژدہ دیتی ہیں اور اپنے حکم سے

الْمائَ مِنَ السَّمائِ بِکَلِمَتِہِ، وَیُنْبِتُ النَّباتَ بِقُدْرَتِہِ، وَیَسْقُطُ الْوَرَقُ بِعِلْمِہِ، سُبْحانَ

آسمانوں کی طرف سے پانی اتارتا ہے اپنی قدرت سے سبزیاگاتا ہے اور اپنے علم کے ساتھ پتوں کو توڑگراتا ہے پاک ہے

اللّهِ الَّذِی لاَ یَعْزُبُ عَنْہُ مِثْقالُ ذَرَّۃٍ فِی الْاَرْضِ وَلاَ فِی السَّمائِ وَلاَ ٲَصْغَرُ مِنْ

اللہ جس کی لیے زمین اور آسمانوں میں کوئیذرہ برابر چیز اوجھل نہیں ہے اور ان میںسے کوئی چھوٹی

ذلِکَ وَلاَ ٲَکْبَرُ إلاَّ فِی کِتابٍ مُبِینٍ ﴿ ۴ ﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ

بڑی چیز نہیں ہے جو ایکواضح کتاب میں نہ لکھی ہوئی ہو﴿۴﴾پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنیوالا پاک ہے اللہ

الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ

صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہ تمام موجودات میں جوڑے بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کاپیدا کرنے والا

سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ

پاک ہے اللہ دانے اور بیج کا چیرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ

خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ،

دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا

سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی یَعْلَمُ مَا تَحْمِلُ کُلُّ ٲُ نْثی وَمَا تَغِیضُ الْاَرْحامُ وَمَا تَزْدادُ وَکُلُّ

پاک ہے اللہ جس کو معلوم ہے جو کچھ کسی مادہ کے پیٹ میں ہے اور جو کچھ ماؤں کے رحموں میں ہے اور جو کچھ بڑھتا ہے وہ اس

شَیْئٍ عِنْدَھُ بِمِقْدارٍ عالِمُ الْغَیْبِ وَالشَّہادَۃِ الْکَبِیرُ الْمُتَعالِ سَوائٌ مِنْکُمْ مَنْ ٲَسَرَّ

کا اندازہ رکھتا ہے وہ ہر کھلی چھپی چیز کا جاننے والا بزرگتر بلندتر ہے برابر ہے اس کے لیے تم میں جو کوئی راز کی

الْقَوْلَ وَمَنْ جَھَرَ بِہِ وَمَنْ ھُوَ مُسْتَخْفٍ بِاللَّیْلِ وَسارِبٌ بِالنَّہارِ لَہُ مُعَقِّباتٌ مِنْ

بات کرے یا کھول کر اور وہ جو رات کو چھپ کر چلے اور جو دن کے وقت سفر کرے ہر ایک کے آگے اور پیچھے کچھ پیکر ہوتے ہیں

بَیْنِ یَدَیْہِ وَمِنْ خَلْفِہِ یَحْفَظُونَہُ مِنْ ٲَمْرِ اللّهِ، سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی یُمِیتُ الْاَحْیائَ

جو خدا کے حکم کے مطابق اس کی حفاظت کیا کرتے ہیں پاک ہے اللہ کہ جو زندوں کو موت دیتا

وَیُحْیِی الْمَوْتی وَیَعْلَمُ مَا تَنْقُصُ الْاَرْضُ مِنْھُمْ وَیُقِرُّ فِی الْاَرْحامِ مَا یَشائُ إلی

اور مردوں کو زندہ کرتا ہے وہ جانتا ہے زمین ان میں جو کمی کرتی ہے اور جو چاہتا ہے وقت مقررہ تک رحموں میں

ٲَجَلٍ مُسَمّیً ۔ ﴿۵﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ

قرار دیتا ہے ﴿۵﴾پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنیوالا پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے

اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ

اللہ تمام موجودات میں جوڑیبنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو

الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ

چیرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا

یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ مالِکِ

کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ جو ملک کا

الْمُلْکِ تُؤْتِی الْمُلْکَ مَنْ تَشائُ وَتَنْزِعُ الْمُلْکَ مِمَّنْ تَشائُ وَتُعِزُّ مَنْ تَشائُ وَتُذِلُّ مَنْ

مالک ہے جسے چاہے حکومت دیتا ہے اور جس سے چاہے حکومت چھین لیتا ہے اور جسے چاہے عزت دیتا ہے اور جسے چاہے ذلیل

تَشائُ، بِیَدِکَ الْخَیْرُ إنَّکَ عَلَی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیرٌ تُو لِجُ اللَّیْلَ فِی النَّہارِ، وَتُو لِجُ النَّہارَ

کرتا ہے بھلائی تیرے ہی ہاتھ میں ہے بے شک تو ہر چیز پر قدرت رکھتا ہے رات کو دن میں داخل کرتا ہے اور دن کو رات

فِی اللَّیْلِ، وَتُخْرِجُ الْحَیَّ مِنَ الْمَیِّتِ، وَتُخْرِجُ الْمَیِّتَ مِنَ الْحَیِّ، وَتَرْزُقُ مَنْ تَشائُ

میں داخل کرتا ہے مردہ سے زندہ کو نکالتا اور زندہ سے مردہ کو نکالتا ہے اور جسے چاہے بغیر حساب کے

بِغَیْرِ حِسابٍ ﴿ ۶ ﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ

رزق دیتا ہے﴿۶﴾ پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے

اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ

اللہ تمام موجودات میں جوڑے بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی و تاریکی کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو

الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ

چیرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا

یُری سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی عِنْدَھُ

کرنے والا پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ جس کے پاس

مَفاتِحُ الْغَیْبِ لاَ یَعْلَمُہا إلاَّ ھُوَ وَیَعْلَمُ مَا فِی الْبَرِّ وَالْبَحْرِ وَمَا تَسْقُطُ مِنْ وَرَقَۃٍ إلاَّ

غیب کی کنجیاں ہیں جن کا اس کے سوا کسی کو علم نہیں وہ جانتا ہے جو کچھ ہے صحرائ و دریا میں اور نہیں گرتا کوئی پتا مگر وہ

یَعْلَمُہا وَلاَ حَبَّۃٍ فِی ظُلُماتِ الْاَرْضِ وَلاَ رَطْبٍ وَلاَ یابِسٍ إلاَّ فِی کِتابٍ مُبِینٍ ﴿۷﴾

اسے جانتا ہے اور نہیں کوئی دانہ زمین کی تاریکیوں میں اور نہیں کوئی خشک وتر مگر یہ کہ وہ واضح کتاب میں مذکورہے﴿۷﴾

سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ

پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہ تمام موجودات میں جوڑے

کُلِّہا سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی

بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی اور تاریکی کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو چیرنے والا

سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری سُبْحانَ اللّهِ

پاک ہے اللہ ہر چیز کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ

مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی لاَ یُحْصِی مِدْحَتَہُ

اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا پاک ہے وہ اللہ کہ بولنے والے جس کی تعریف کا حق ادا نہیں کر

الْقائِلُونَ، وَلاَ یَجْزِی بِآلائِہِ الشَّاکِرُونَ الْعابِدُونَ، وَھُوَ کَما قالَ وَفَوْقَ مَا نَقُولُ

پاتے اس کا شکر کرنے اور عبادت کرنے والے اس کا حق نعمت ادا نہیں کرسکتے وہ ایسا ہے جیسا اس نے کہا اور جو ہم کہتے ہیں

وَاللّهُ سُبْحانَہُ کَما ٲَثْنی عَلَی نَفْسِہِ، وَلاَ یُحِیطُونَ بِشَیْئٍ مِنْ عِلْمِہِ إلاَّ بِما شائَ

اس سے بلند ہے اور اللہ پاک ہے جیسے اس نے اپنی تعریف فرمائی اور وہ اس کے علم میں سے کچھ نہیں جان سکتے مگر وہی جو وہ چاہے

وَسِعَ کُرْسِیُّہُ السَّمَاوَاتِ وَالْاَرْضَ وَلاَ یَؤُودُھُ حِفْظُھُما وَھُوَ الْعَلِیُّ الْعَظِیمُ ﴿۸﴾

اس کی حکومت زمین اور آسمانوں کو گھیرے ہوئے ہے اور ان کی حفاظت اسے تھکاتی نہیں اور وہ بلند ہے بڑائی والا ﴿۸﴾

سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ، سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ

پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ صورت گری کرنیوالا پاک ہے اللہ تمام موجودات میں جوڑے

کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی

بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی اور تاریکی کا بنانے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج کو چیرنے والا

سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری، سُبْحانَ

پاک ہے اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے

اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی یَعْلَمُ مَا یَلِجُ فِی

اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ جہانوں کا پالنے والا پاک ہے کہ جو جانتا ہے زمین میں

الْاَرْضِ وَمَا یَخْرُجُ مِنْہا، وَمَا یَنْزِلُ مِنَ السَّمائِ وَمَا یَعْرُجُ فِیہا، وَلاَ یَشْغَلُہُ مَا یَلِجُ

داخل ہونے اور اس سے خارج ہونے والی چیزوں کو اور جو آسمان سے اترتا ہے اور اس کی طرف بلند ہوتا ہے اور اسے زمین

فِی الْاَرْضِ وَمَا یَخْرُجُ مِنْہا عَمَّا یَنْزِلُ مِنَ السَّمائِ وَمَا یَعْرُجُ فِیہا، وَلاَ یَشْغَلُہُ مَا

میں داخل اور اس سے خارج ہونے والی چیزیں آسمان سے نازل ہونے اور اس طرف بلند ہونے والی چیزوں سے غافل نہیں

یَنْزِلُ مِنَ السَّمائِ وَمَا یَعْرُجُ فِیہا عمَّا یَلِجُ فِی الْاَرْضِ وَمَا یَخْرُجُ مِنْہا، وَلاَ یَشْغَلُہُ

کرتیں اور آسمان سے اترنے اور اس میں چڑھنے والی چیزیں زمین میں داخل اور اس سے خارج ہونے والی چیزوں سے غافل نہیں کرتیں

عِلْمُ شَیْئٍ عَنْ عِلْمِ شَیْئٍ وَلاَ یَشْغَلُہُ خَلْقُ شَیْئٍ عَنْ خَلْقِ شَیْئٍ، وَلاَ حِفْظُ شَیْئٍ

اوراسے ایک چیز کا علم دوسری کے علم سے غافل نہیں کرتا اور ایک چیز کا پیدا کرنا دوسری کے پیدا کرنے سے غافل نہیں کرتا اور ایک

عَنْ حِفْظِ شَیْئٍ، وَلاَ یُساوِیہِ شَیْئٌ ، وَلاَ یَعْدِلُہُ شَیْئٌ، لَیْسَ کَمِثْلِہِ شَیْئٌ، وَھُوَ

چیز کی نگہبانی دوسری کی نگہبانی سے غافل نہیں کرتی اور نہ کوئی چیز اس کے برابر ہے نہ کوئی چیز اس جیسی ہے کوئی چیز اس کی مان

السَّمِیعُ الْبَصِیرُ ﴿۹﴾ سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ سُبْحانَ

ہی نہیں اور وہ ہے سننے والا دیکھنے والا﴿۹﴾ پاک ہے اللہ جانداروں کا پیداکرنے والا پاک ہے اللہ صورت گری کرنے والا پاک ہے

اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا، سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّوْرِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ

اللہ تمام موجودات میں جوڑے بنانے والا پاک ہے اللہ روشنی اور تاریکی کا بنانے والا پاک ہے اللہ دانے اور بیج

الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ

کو چیرنے والا پاک ہے اللہ ہر چیز کا پیدا کرنیوالا پاک ہے اللہ دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا

یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ کَلِماتِہِ، سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ فاطِرِ

کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو بڑھانے والا پاک ہے اللہ تمام جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ جس نے پیدا کیے

السَّمَاواتِ وَالْاَرْضِ جاعِلِ الْمَلائِکَۃِ رُسُلاً ٲُولِی ٲَجْنِحَۃٍ مَثْنی وَثُلاثَ وَرُباعَ

آسمان اور زمین اور ملائکہ کو اپنے قاصد قراردیا جو دو دو تین تین اور چار چار پروں والے ہیں وہ مخلوق

یَزِیدُ فِی الْخَلْقِ مَا یَشائُ إنَّ اللّهَ عَلَی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیرٌ مَا یَفْتَحِ اللّهُ لِلنّاسِ مِنْ رَحْمَۃٍ

میں جتنا چاہے اضافہ کرتا ہے بیشک اللہ ہر چیز پر قدرت رکھتا ہے اللہ رحمت کا جو در چاہے لوگوں پر کھول دیتا ہے تو کوئی

فَلا مُمْسِکَ لَہا وَمَا یُمْسِکْ فَلا مُرْسِلَ لَہُ مِنْ بَعْدِھِ وَھُوَ الْعَزِیزُ الْحَکِیمُ ﴿10﴾

اسے بند کرنے والا نہیں اور جسے وہ روک دے اس کے بعد کوئی اسے کھولنے والا نہیں اور وہ ہے غلبے والا حکمت والا ﴿10﴾

سُبْحانَ اللّهِ بارِیََ النَّسَمِ سُبْحانَ اللّهِ الْمُصَوِّرِ سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ الْاَزْواجِ کُلِّہا

پاک ہے اللہ جانداروں کا پیدا کرنیوالا پاک ہے اللہ صورت گری کرنے والا پاک ہے اللہ تمام موجودات میں جوڑے بنانے والا

سُبْحانَ اللّهِ جاعِلِ الظُّلُماتِ وَالنُّورِ، سُبْحانَ اللّهِ فالِقِ الْحَبِّ وَالنَّوی، سُبْحانَ

پاک ہے اللہ روشنی اور تاریکی کو جد اجدا بنانے والا پاک ہے اللہ زیرزمین دانے اور بیج کو چیرنے والا پاک ہے

اللّهِ خالِقِ کُلِّ شَیْئٍ، سُبْحانَ اللّهِ خالِقِ مَا یُری وَمَا لاَ یُری، سُبْحانَ اللّهِ مِدادَ

اللہ سب چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ تمام دیکھی ان دیکھی چیزوں کا پیدا کرنے والا پاک ہے اللہ اپنے کلمات کو

کَلِماتِہِ سُبْحانَ اللّهِ رَبِّ الْعالَمِینَ، سُبْحانَ اللّهِ الَّذِی یَعْلَمُ مَا فِی السَّماواتِ وَمَا

بڑھانے والا پاک ہے اللہ تمام جہانوں کا پالنے والا پاک ہے اللہ وہی ہے جو جانتا ہے جو کچھ آسمانوں میں اور جو کچھ

فِی الْاَرْضِ مَا یَکُونُ مِنْ نَجْوی ثَلاثَۃٍ إلاَّ ھُوَ رابِعُھُمْ وَلاَ خَمْسَۃٍ إلاَّ ھُوَ سادِسُھُمْ

زمینوں میں ہے کہیں تین آدمی سرگوشی نہیں کرتے مگر یہ کہ وہ ان میں چوتھا ہوتا ہے پانچ آدمی نہیں مگر وہ ان میں چھٹا ہوتا ہے

وَلاَ ٲَدْنی مِنْ ذلِکَ وَلاَ ٲَکْثَرَ إلاَّ ھُوَ مَعَھُمْ ٲَیْنَما کانُوا ثُمَّ یُنَبِّئُھُمْ بِما عَمِلُوا یَوْمَ

اور اس سے کم و بیش آدمی سرگوشی نہیں کرتے ہیں مگر وہ ان کے ساتھ ہوتا ہے وہ جہاں کہیں بھی ہوں مگر وہ قیامت کے روز انہیں ان

الْقِیامَۃِ إنَّ اللّهَ بِکُلِّ شَیْئٍ عَلِیمٌ ۔

کے اعمال سے آگاہ کرے گا بے شک اللہ ہر چیز سے واقف ہے۔

﴿۳﴾علماء کا فرمان ہے کہ ماہ رمضان میں حضور(ص) پرہر روز یہ صلٰوۃ پڑھے:

إنَّ اللّهَ وَمَلائِکَتَہُ یُصَلُّونَ عَلَی النَّبِیِّ یَا ٲَ یُّھَا الَّذِینَ آمَنُوا صَلُّوا عَلَیْہِ وَسَلِّمُوا

بے شک اللہ اوراس کے فرشتے درود بھیجتے ہیں نبی(ص) پاک پر تو اے وہ لوگو جو ایمان لائے ہو تم بھی ان پر درود بھیجو اور سلام جو

تَسْلِیماً، لَبَّیْکَ یَا رَبِّ وَسَعْدَیْکَ وَسُبْحانَکَ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ

کا حق ہے حاضر ہوں اے پروردگار تیرے سامنے اور تو سعادت کامالک اور پاک تر ہے اے معبود! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر درود بھیج

وَبارِکْ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ کَما صَلَّیْتَ وَبارَکْتَ عَلَی إبْراھِیمَ وَآلِ إبْراھِیمَ إنَّکَ

اور محمد(ص) و آل محمد(ص) پر برکت نازل فرما جیسا کہ تو نے جناب ابراہیم(ع) اور آل ابراہیم(ع) پر درود بھیجا اور برکت نازل کی

حَمِیدٌ مَجِیدٌ اَللّٰھُمَّ ارْحَمْ مُحَمَّداً وَآلَ مُحَمَّدٍ کَما رَحِمْتَ إبْراھِیمَ وَآلَ إبْراھِیمَ إنَّکَ

تعریف و بزرگی والا ہے اے اللہ محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحم فرما جیسا کہ تو نے ابراہیم(ع) و آل ابراہیم(ع) پر رحم فرمایا بے ش

حَمِیدٌ مَجِیدٌ اَللّٰھُمَّ سَلِّمْ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ کَما سَلَّمْتَ عَلَی نُوحٍ فِی الْعالَمِینَ

تعریف و بزرگی والا ہے اے اللہ! محمد(ص) وآل محمد(ص) پر سلام بھیج جیسا کہ تو نے عالمین میں حضرت نوح(ع) پر سلام بھیجا

اَللّٰھُمَّ امْنُنْ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ کَما مَنَنْتَ عَلَی مُوسی وَہارُونَ اَللّٰھُمَّ صَلِّ

اے اللہ! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر احسان فرما جیسا کہ تو نے موسیٰ(ع) و ہارون(ع) پر احسان فرمایا اے اللہ محمد(ص) وآل محمد(ص)

عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ کَما شَرَّفْتَنا بِہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ کَما

درود بھیج جیسا کہ تونے ہمیں اس سے مشرف کیا اے اللہ! محمد(ص) وا ٓل محمد(ص) پر درود بھیج جیسا کہ تو نے ہمیں ان کے

ھَدَیْتَنا بِہِ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَابْعَثْہُ مَقاماً مَحْمُوداً یَغْبِطُہُ بِہِ

ذریعے ہدایت دی اے اللہ! محمد(ص) و آل محمد(ص) پر درود بھیج اور آنحضرت(ص) کو مقام محمود پر سرفراز فرما کہ اس سے پہلے پچھلے

الْاَوَّلُونَ وَالاَْخِرُونَ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِہِ اَلسَّلاَمُ کُلَّما طَلَعَتْ شَمْسٌ ٲَوْ غَرَبَتْ، عَلَی

ان پر رشک کرنے لگ جائیں۔ محمد(ص) اور ان کی آل(ع) پر سلام ہو جب تک سورج کا طلوع و غروب ہو محمد(ص) اور

مُحَمَّدٍ وَآلِہِ اَلسَّلاَمُ کُلَّما طَرَفَتْ عَیْنٌ ٲَوْ بَرَقَتْ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِہِ اَلسَّلاَمُ کُلَّما ذُکِرَ

ان کی آل(ع) پر سلام ہو جب تک آنکھ جھپکتی یا کھلتی رہے محمد(ص) اور ان کی آل(ع) پر سلام ہو جب تک سلام کیا

اَلسَّلاَمُ، عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِہِ اَلسَّلاَمُ کُلَّما سَبَّحَ اللّهَ مَلَکٌ ٲَوْ قَدَّسَہُ، اَلسَّلاَمُ عَلَی

جاتا رہے محمد(ص) اور ان کی آل(ع) پر سلام ہو جب تک فرشتے اللہ کی تسبیح و تقدیس کرتے رہیں محمد(ص) اور ان کی آل(ع) پر

مُحَمَّدٍ وَآلِہِ فِی الْاَوَّلِینَ، وَاَلسَّلاَمُ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِہِ فِی الاَْخِرِینَ، وَاَلسَّلاَمُ عَلَی

سلام ہو اولین میں اور محمد(ص) اور ان کی آل(ع) پر سلام ہو آخرین میں اور محمد(ص) اور ان کی آل(ع)

مُحَمَّدٍ وَآلِہِ فِی الدُّنْیا وَالاَْخِرَۃِ ۔ اَللّٰھُمَّ رَبَّ الْبَلَدِ الْحَرامِ، وَرَبَّ الرُّکْنِ وَالْمَقامِ،

پر سلام ہو دنیا اور آخرت میں۔ اے اللہ! اے حرمت والے شہر مکہ کے رب اے رکن اور مقام کے رب

وَرَبَّ الْحِلِّ وَالْحَرامِ ٲَبْلِغْ مُحَمَّداً نَبِیَّکَ عَنَّا السَّلامَ ۔ اَللّٰھُمَّ ٲَعْطِ مُحَمَّداً مِنَ الْبَہائِ

اور اے حل و حرام کے رب اپنے نبی محمد(ص) کے حضور ہمارا سلام پہنچادے اے اللہ! محمد(ص) کو تابش، تازگی،

وَالنَّضْرَۃِ وَالسُّرُورِ وَالْکَرامَۃِ وَالْغِبْطَۃِ وَالْوَسِیلَۃِ وَالْمَنْزِلَۃِ وَالْمَقامِ وَالشَّرَفِ

شادمانی، بزرگواری، فضیلت، وسیلہ، بلندی، مرتبہ، عزت،

وَالرِّفْعَۃِ وَالشَّفاعَۃِ عِنْدَکَ یَوْمَ الْقِیامَۃِ ٲَفْضَلَ ما تُعْطِی ٲَحَداً مِنْ خَلْقِکَ، وَٲَعْطِ

برتری اور قیامت میں اپنے حضور شفاعت کرنے کا حق عطا فرما اس سے زیادہ جو تو نے مخلوق میں سے کسی کو دیا اور عطا فرما محمد(ص)

مُحَمَّداً فَوْقَ مَا تُعْطِی الْخَلائِقَ مِنَ الْخَیْرِ ٲَضْعافاً کَثِیرَۃً لاَ یُحْصِیہا غَیْرُکَ اَللّٰھُمَّ

اس سے فوقیت جو بھلائی تو نے مخلوق کو دی ہے آنحضرت(ص) کو کئی گنا زیادہ دے جسے بجز تیرے کوئی شمار نہ کرسکے اے اللہ!

صَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ ٲَطْیَبَ وَٲَطْھَرَ وَٲَزْکی وَٲَ نْمی وَٲَ فْضَلَ مَا صَلَّیْتَ

محمد(ص) و آل محمد(ص) پر درود بھیج پاک تر پاکیزہ تر عمدہ بہترین اور زیادہ اس سے جو درود تو نے اگلے پچھلے

عَلَی ٲَحَدٍ مِنَ الْاَوَّلِینَ وَالاَْخِرِینَ وَعَلَی ٲَحَدٍ مِنْ خَلْقِکَ یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ اَللّٰھُمَّ

لوگوں میں کسی پر بھیجا اور اپنی مخلوق میں سے کسی پر بھیجا ہے اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے۔ اے اللہ!

صَلِّ عَلَی عَلِیٍّ ٲَمِیرِ الْمُؤْمِنِینَ وَوالِ مَنْ والاھُ وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ الْعَذابَ

امیرالمومنین حضرت علی(ع) پر رحمت فرما ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی رکھ اور ان کے قتل میں شریک پر

عَلَی مَنْ شَرِکَ فِی دَمِہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی فاطِمَۃَ بِنْتِ نَبِیِّکَ مُحَمَّدٍ عَلَیْہِ وَآلِہِ اَلسَّلاَمُ

دوچند عذاب نازل کر اے اللہ! اپنے نبی محمد(ص) کی دختر فاطمہ(ع) پر رحمت فرما کہ آنحضرت(ص) اور ان کی آل(ع) پر سلام ہو

وَوالِ مَنْ وَالاہا، وَعادِ مَنْ عَادَاھَا، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہا، وَالْعَنْ مَنْ

ان کے دوست سے دوستی رکھ اور انے کے دشمن سے دشمنی رکھ اور ان پر ظلم کرنے والے کے عذاب کو دو چند کر دے اور لعنت کر جس

آذی نَبِیَّکَ فِیہا ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی الْحَسَنِ وَالْحُسَیْنِ إمامَیِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ مَنْ

نے فاطمہ(ع) کے بارے میں تیرے نبی(ص) کو ستایا اے اللہ! حسن(ع) و حسین(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے دو امام(ع) ہیں ان دونوں

وَالاھُما، وَعادِ مَنْ عَاداھُما، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ شَرِکَ فِی دِمائِھِما ۔ اَللّٰھُمَّ

سے دوستی رکھ اور ان دونوں کے دشمن سے دشمنی کر اور جنہوں نے انکا خون بہانے میں شرکت کی انکا عذاب دوچند کردے اے اللہ!

صَلِّ عَلَی عَلِیِّ بْنِ الْحُسَیْنِ إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ،

علی(ع) بن الحسین(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر

وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدِ بْنِ عَلِیٍّ إمامِ الْمُسْلِمِینَ

جنہوں نے آپ پر ظلم ڈھایا اور ان کا عذاب دو چند کر دے اے اللہ! محمد(ع)بن علی(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں

وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ

ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر جنہوں نے آپ پر ظلم کیا ان کا ع ذاب دوچند کردے۔ اے اللہ! جعفر(ع) بن

عَلَی جَعْفَرِ بْنِ مُحَمَّدٍ إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ وَضاعِفِ

محمد(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں اور ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر اور جہنوں نے آپ پر ظلم

الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُوسَی بْنِ جَعْفَرٍ إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ

ان کا عذاب دوچند کردے اے اللہ! موسیٰ(ع) بن جعفر(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں ان کے دوست سے

مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ شَرِکَ فِی دَمِہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ

دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر جنہوں نے آپ کا خون بہانے میں شرکت کی ان کا عذاب دو چند کردے اے اللہ ! علی(ع) بن

عَلَی عَلِیِّ بْنِ مُوسی إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ وَضاعِفِ

موسیٰ(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر اور جنہوں نے آپ کا خون

الْعَذابَ عَلَی مَنْ شَرِکَ فِی دَمِہِ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی مُحَمَّدِ بْنِ عَلِیٍّ إمامِ الْمُسْلِمِینَ،

بہانے میں شرکت کی ان کا عذاب دوچند کردے اے اﷲ ! علی (ع)بن محمد(ع) پر رحمت فرما کہ جو مسلمانوں کے امام ہیں

وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ

ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کراور جنہوں نے آپ (ع) پر ظلم کیا ان کا عذاب دو چند کر دے اے اﷲ! علی(ع) بن

عَلَی عَلِیِّ بْنِ مُحَمَّدٍ إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ

محمد(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں ان کے دوست سے دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کراور جنہوں آپ (ع) پر ظلم کیا

الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی الْحَسَنِ بْنِ عَلِیٍّ إمامِ الْمُسْلِمِینَ، وَوالِ

عذاب دو چند کر دے اے اﷲ ! حسن(ع) بن علی(ع) پر رحمت فرما جو مسلمانوں کے امام ہیں ان کے دوست سے

مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَضاعِفِ الْعَذابَ عَلَی مَنْ ظَلَمَہُ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی

دوستی رکھ اور ان کے دشمن سے دشمنی کر اور جنہوں نے آپ پر ظلم کیا ان کا عذاب دو چند کر دے اے اﷲ! ان کے ما بعد

الْخَلَفِ مِنْ بَعْدِھِ إمامِ الْمُسْلِمِینَ وَوالِ مَنْ والاھُ، وَعادِ مَنْ عاداھُ، وَعَجِّلْ فَرَجَہُ

جانشین پر رحمت فرماجو مسلمانوں کے امام ہیں انکے دوست سے دوستی رکھ اور انکے دشمن سے دشمنی کر اور ان کے ظہور میں جلدی فرما

اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی الْقاسِمِ وَالطَّاھِرِ ابْنَیْ نَبِیِّکَ ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی رُقَیَّۃَ بِنْتِ نَبِیِّکَ

اے اﷲ جناب قاسم (ع)و جناب طاہر (ع)پر رحمت فرما جو تیرے نبی(ص) کے بیٹے ہیں اے اﷲ ! رقیہ پر رحمت فرما جو تیرے نبی (ص) کی لے

وَالْعَنْ مَنْ آذی نَبِیَّکَ فِیہا ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی ٲُمِّ کُلْثُومَ بِنْتِ نَبِیِّکَ،

اور لعنت کر اس پر جس نے ان کے بارے میں تیرے نبی (ص) کو ستایا اے اﷲ! ام کلثوم پر رحمت فرما جو تیرے نبی (ص) کی لے پالک بیٹی

وَالْعَنْ مَنْ آذی نَبِیَّکَ فِیہا ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلَی ذُرِّیَّۃِ نَبِیِّکَ ۔ اَللّٰھُمَّ اخْلُفْ

اور لعنت کر اس پر جس نے انکے بارے میں تیرے نبی(ص) کو ستایا اے اﷲ! اپنے نبی(ص) کی اولاد پر رحمت فرما اے اﷲ اپنے نبی(ص) کے پ

نَبِیَّکَ فِی ٲَھْلِ بَیْتِہِ اَللّٰھُمَّ مَکِّنْ لَھُمْ فِی الْاَرْضِ۔ اَللّٰھُمَّ اجْعَلْنا مِنْ عَدَدِھِمْ وَمَدَدِھِمْ

ان کے اہل بیت (ع)کا مددگار بن اے اﷲ ! انہیں زمین میں مقتدر بنا اے اﷲ! ہمیں حق کے بارے میں ان کے کھلے چھپے حامیوں

وَٲَنْصارِھِمْ عَلَی الْحَقِّ فِی السِّرِّ وَالْعَلانِیَۃِ اَللّٰھُمَّ اطْلُبْ بِذَحْلِھِمْ وَوِتْرِھِمْ وَدِمائِھِمْ

مددگاروں اور ناصروں میں سے قرار دے اے اﷲ ! ان سے دشمنی کرنے ان کو تنہا چھوڑنے اور ان کا خون بہانے کا بدلہ لے

وَکُفَّ عَنّا وَعَنْھُمْ وَعَنْ کُلِّ مُؤْمِنٍ وَمُؤْمِنَۃٍ بَٲْسَ کُلِّ باغٍ وَطاغٍ وَکُلِّ دابَّۃٍ ٲَنْتَ آخِذٌ

ہماری، ان کی اور ہر مومن و مومنہ کی مدد فرما ہر ایک نا فرمان سرکش اور ہر حیوان کی اذیت پر کہ وہ تیرے قبضہ

بِناصِیَتِہا إنَّکَ ٲَشَدُّ بَٲْساً وَٲَشَدُّ تَنْکِیلاً ۔

قدرت میں ہیں بے شک تو ہے سخت عذاب والا بڑے دباؤ والا۔

سید ابن طاؤس نے فرمایا ہے کہ پھر یہ کہے:

یَا عُدَّتِی فِی کُرْبَتِی، وَیَا صاحِبِی فِی شِدَّتِی، وَیَا وَ لِیِّی فِی نِعْمَتِی ، وَیَا غایَتِی

اے مصیبت میں میرے سرمایہ اے سختی میں میرے ساتھی اے میری نعمت کے نگہبان اے میری چاہت

فِی رَغْبَتِی، ٲَ نْتَ السَّاتِرُ عَوْرَتِی، وَالْمُؤْمِنُ رَوْعَتِی، وَالْمُقِیلُ عَثْرَتِی، فَاغْفِرْ لِی

کے مرکز تو میرے عیبوں کے چھپانے والا خوف میں ڈھارس دینے والا اور خطائیں معاف کرنے والا پس میری غلطیاں

خَطِیئَتِی یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ ۔

معاف کردے اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے ۔

اس کے بعد یہ کہے : اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَدْعُوکَ لِھَمٍّ لاَ یُفَرِّجُہُ غَیْرُکَ، وَ لِرَحْمَۃٍ لاَ تُنالُ إلاَّ بِکَ،

اے معبود ! میں تجھے پکارتا ہوں پریشانی میں کہ اسے تیرے سوا کوئی دور نہیں کرسکتا رحمت کیلئے کہ جو تجھی سے ملتی ہے اور

وَ لِکَرْبٍ لاَ یَکْشِفُہُ إلاَّ ٲَ نْتَ، وَ لِرَغْبَۃٍ لاَ تُبْلَغُ إلاَّ بِکَ، وَ لِحاجَۃٍ لاَ یَقْضِیہا إلاَّ ٲَ نْتَ

دکھ میں کہ اسے سوائے تیرے کوئی ہٹا نہیں سکتا اور خواہش کیلئے کہ وہ تو ہی پوری کرتا ہے اور حاجت کیلئے کہ اسے تو ہی روا فرما

اَللّٰھُمَّ فَکَما کانَ مِنْ شَٲْنِکَ مَا ٲَذِنْتَ لِی بِہِ مِنْ مَسْٲَلَتِکَ، وَرَحِمْتَنِی بِہِ مِنْ ذِکْرِکَ

اے اﷲ! جیسے تو نے اپنی شان و کرم سے مجھے اجازت دی ہے کہ میں تجھ سے سوال کروں اور مانگوں اور تو نے اپنی یاد سے مجھ پر رحمت

فَلْیَکُنْ مِنْ شَٲْنِکَ سَیِّدِی الْاِجابَۃُ لِی فِیما دَعَوْتُکَ وَعَوائِدُ الْاِفْضالِ فِیما رَجَوْتُکَ

پس اسی طرح اے میرے سرداراپنی مہربانی سے میری طلب کردہ حاجت پوری فرما جن چیزوں کی امید کرتا ہوں وہ مجھے عطا کردے

وَالنَّجاۃُ مِمَّا فَزِعْتُ إلَیْکَ فِیہِ فَ إنْ لَمْ ٲَکُنْ ٲَھْلاً ٲَنْ ٲَبْلُغَ رَحْمَتَکَ فَ إنَّ رَحْمَتَکَ ٲَھْلٌ

اور ہر اس چیز سے نجات دے جس سے تیری پناہ مانگی ہے اگر میں اس لائق نہیں کہ مجھ پر تیری رحمت ہو تو بھی تیری رحمت اسکی اہل ہے

ٲَنْ تَبْلُغَنِی وَتَسَعَنِی، وَ إنْ لَمْ ٲَکُنْ لِلاِِْجابَۃِ ٲَھْلاً فَٲَ نْتَ ٲَھْلُ الْفَضْلِ، وَرَحْمَتُکَ

کہ مجھ تک پہنچے اور مجھے گھیر لے اور اگر میں اس لائق نہیں کہ میری دعا قبول ہو تو بھی تو فضل کرنے کا اہل ہے اور تیری رحمت

وَسِعَتْ کُلَّ شَیْئٍ، فَلْتَسَعْنِی رَحْمَتُکَ یَا إلھِی یَا کَرِیمُ ٲَسْٲَ لُکَ بِوَجْھِکَ الْکَرِیمِ ٲَنْ

ہر چیز پر چھائی ہوئی ہے پس ضرور ہے کہ تیری رحمت مجھے گھیر لے اے معبود! اے مہربان میں تیری ذات کریم کے واسطے سے سوالی

تُصَلِّیَ عَلَی مُحَمَّدٍ وَٲَھْلِ بَیْتِہِ وَٲَنْ تُفَرِّجَ ھَمِّی وَتَکْشِفَ کَرْبِی وَغَمِّی، وَتَرْحَمَنِی

ہوں کہ محمد(ص) پر رحمت نازل کر اور انکے اہل بیت(ع) پر رحمت نازل کر اور یہ کہ میری پریشانی دور کردے میرا دکھ اور غم ہٹا دے

بِرَحْمَتِکَ، وَتَرْزُقَنِی مِنْ فَضْلِکَ، إنَّکَ سَمِیعُ الدُّعائِ قَرِیبٌ مُجِیبٌ ۔

رحمت کے مجھ پر رحم کر اور اپنے فضل سے مجھے روزی دے بے شک تو دعا کا سننے والا قریب سے جواب دینے والاہے ۔

﴿۴﴾ شیخ و سید فرماتے ہیں کہ ہر روز یہ دعا بھی پڑھے:

اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ مِنْ فَضْلِکَ بِٲَ فْضَلِہِ وَکُلُّ فَضْلِکَ فاضِلٌ، اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ

اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیرے فضل میں سے زیادہ فضل کا اور تیر اسارا ہی فضل بہت بڑھا ہوا ہے اے معبود !میں سوال ک

بِفَضْلِکَ کُلِّہِ ۔ اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ مِنْ رِزْقِکَ بِٲَعَمِّہِ وَکُلُّ رِزْقِکَ عامٌّ

تجھ سے تیرے سارے ہی فضل کا اے معبود! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیرے رزق میں سے عمومی رزق کا اور تیرا سارا رزق عام ہے

اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ بِرِزْقِکَ کُلِّہِ ۔ اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ مِنْ عَطائِکَ بِٲَھْنَئِہِ

اے معبود! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیرے تمام تر رزق کا اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیری عطا میں سے گوارا تر کا اور

وَکُلُّ عَطائِکَ ھَنِیئٌ، اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ بِعَطائِکَ کُلِّہِ ۔ اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ

تیری تمام عطائیں ہی گواراتر ہیں اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیری ہر ایک عطا کا اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے

مِنْ خَیْرِکَ بِٲَعْجَلِہِ وَکُلُّ خَیْرِکَ عاجِلٌ، اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَ لُکَ بِخَیْرِکَ کُلِّہِ

تیری بھلائی میں سے جلد پہنچنے والی کا اور تیری ہر بھلائی جلد پہنچنے والی ہے اے معبود! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیری تمام ب

اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَلُکَ مِنْ إحْسانِکَ بِٲَحْسَنِہِ وَکُلُّ إحْسانِکَ حَسَنٌ اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَلُکَ

اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے تیرے بہترین احسان کا اور تیرے تمام احسان بہترین ہیں اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں

بِ إحْسانِکَ کُلِّہِ اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَسْٲَلُکَ بِما تُجِیبُنِی بِہِ حِینَ ٲَسْٲَلُکَ فَٲَجِبْنِی یَا اللّهُ وَصَلِّ

تجھ سے تیرے تمام تر احسانوں کا اے معبود ! میں سوال کرتا ہوں تجھ سے اس واسطے سے جس کو تو قبول فرماتا ہے پس میری دعا قبول

عَلَی مُحَمَّدٍ عَبْدِکَ الْمُرْتَضی، وَرَسُو لِکَ الْمُصْطَفی، وَٲَمِینِکَ وَنَجِیِّکَ دُونَ

کر اے اﷲ اور اپنے رضا یافتہ بندے حضرت محمد(ص) پر رحمت فرما جو تیرے چنے ہوئے رسول(ص) تیرے امانتدار ساری مخلوق میںتیرے

خَلْقِکَ وَنَجِیبِکَ مِنْ عِبادِکَ، وَنَبِیِّکَ بِالصِّدْقِ وَحَبِیبِکَ، وَصَلِّ عَلَی رَسُولِکَ

رازدار بندوں میں سے تیرے پسندیدہ تیرے سچے نبی(ص) اور تیرے دوست ہیں اور اپنے رسول(ص) پر رحمت فرما

وَخِیَرَتِکَ مِنَ الْعالَمِینَ الْبَشِیرِ النَّذِیرِ، السِّراجِ الْمُنِیرِ، وَعَلَی ٲَھْلِ بَیْتِہِ الْاَ بْرارِ

جو سارے جہانوں میں تیرے منتخب بشارت دینے والے ڈرانے والے اور چراغِ روشن ہیں اور ان کے نیک پاک اہل بیت(ع) پر

الطّاھِرِینَ، وَعَلَی مَلائِکَتِکَ الَّذِینَ اسْتَخْلَصْتَھُمْ لِنَفْسِکَ وَحَجَبْتَھُمْ عَنْ خَلْقِکَ،

اور اپنے فرشتوں پر رحمت فرما جن کو تو نے اپنے لئے خاص کیا اور انہیں اپنی مخلوق سے پوشیدہ رکھا اور اپنے نبیوں

وَعَلَی ٲَنْبِیائِکَ الَّذِینَ یُنْبِئُونَ عَنْکَ بِالصِّدْقِ وَعَلَی رُسُلِکَ الَّذِینَ خَصَصْتَھُمْ بِوَحْیِکَ

پر رحمت کر جو تیری سچی خبر دیتے رہے ہیں اور ان رسولوں پر جن کو تونے اپنی وحی کیلئے مخصوص کیا

وَفَضَّلْتَھُمْ عَلَی الْعالَمِینَ بِرِسالاتِکَ، وَعَلَی عِبادِکَ الصَّالِحِینَ الَّذِینَ ٲَدْخَلْتَھُمْ

اور ان کو اپنے پیغاموں کا حامل بنا کر جہانوں میں فضیلت دی اور اپنے نیک بندوں پر رحمت کر جن کو تونے اپنے

فِی رَحْمَتِکَ الْاَئِمَّۃِ الْمُھْتَدِینَ الرَّاشِدِینَ وَٲَوْ لِیائِکَ الْمُطَہَّرِینَ، وَعَلَی جَبْرائِیلَ

رحمت میں داخل فرمایا ہدایت یافتہ امام اور پیشوا ہیں اور تیرے پاک دل دوست ہیں اور جبرائیل(ع)

وَمِیکائِیلَ وَ إسْرافِیلَ وَمَلَکِ الْمَوْتِ، وَعَلَی رِضْوانَ خازِنِ الْجِنانِ، وَعَلَی مالِکٍ

میکائیل(ع) اسرافیل(ع) اور فرشتہ موت پر رحمت فرما اور رضوان داروغہ جنت پر اور مالک پر رحمت کر

خازِنِ النَّارِ، وَرُوحِ الْقُدُسِ، وَالرُّوحِ الْاَمِینِ، وَحَمَلَۃِ عَرْشِکَ الْمُقَرَّبِینَ، وَعَلَی

جو داروغہ جہنم ہے اور روح القدس و روح الامین پر رحمت کر اور حاملان عرش پر جو تیرے مقرب ہیں اور ان دو فرشتوں

الْمَلَکَیْنِ الْحافِظَیْنِ عَلَیَّ بِالصَّلاۃِ الَّتِی تُحِبُّ ٲَنْ یُصَلِّیَ بِہا عَلَیْھِمْ ٲَھْلُ السَّماواتِ

پر رحمت کرجو نماز میں میرے نگہبان ہیں جو تجھے پسند ہے کہ اس کے ذریعے ان کیلئے رحمت طلب کرتے ہیں آسمانوں والے

وَٲَھْلُ الْاَرَضِینَ صَلاۃً طَیِّبَۃً کَثِیرَۃً مُبارَکَۃً زاکِیَۃً نامِیَۃً ظاھِرَۃً باطِنَۃً شَرِیفَۃً

اور زمین والے پاکیزہ رحمت بہت زیادہ برکت والی نکھری ہوئی بڑھنے والی جو ظاہر و باطن میں عزت و قدر والی

فاضِلَۃً تُبَیِّنُ بِہا فَضْلَھُمْ عَلَی الْاَوَّلِینَ وَالاَْخِرِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ ٲَعْطِ مُحَمَّداً الْوَسِیلَۃَ

ہو کہ اس سے اگلوں پچھلوں پر ان کی بزرگی آشکار ہوجائے اے معبود! حضرت محمد(ص) کو ذریعہ قرب،

وَالشَّرَفَ وَالْفَضِیلَۃَ وَاجْزِھِ خَیْرَ مَا جَزَیْتَ نَبِیّاً عَنْ ٲُمَّتِہِ ۔ اَللّٰھُمَّ وَٲَعْطِ مُحَمَّداً

بزرگی اور بلندی عطا کر اور ان کو امت کی طرف سے وہ بہترین بدلہ دے جو کسی نبی کو اس کی امت سے ملا اے معبود! حضرت محمد

صَلَّی اللّهُ عَلَیْہِ وَآلِہِ مَعَ کُلِّ زُلْفَۃٍ زُلْفَۃً، وَمَعَ کُلِّ وَسِیلَۃٍ وَسِیلَۃً وَمَعَ کُلِّ فَضِیلَۃٍ

کو ہر تقرب کے ساتھ ایک اور تقرب ہر ذریعے کے ساتھ ایک اور ذریعہ ہر بزرگی کے ساتھ ایک اور بزرگی

فَضِیلَۃً، وَمَعَ کُلِّ شَرَفٍ شَرَفاً تُعْطِی مُحَمَّداً وَآلَہُ یَوْمَ الْقِیامَۃِ ٲَ فْضَلَ مَا ٲَعْطَیْتَ

اور ہر بڑائی کے ساتھ ایک اور بڑائی دے اور محمد(ص) اور ان کی آل (ع) کو روز قیامت اس سے بڑا مقام دے جو اس روز تو اگلوں پچھلو

ٲَحَداً مِنَ الْاَوَّلِینَ وَالاَْخِرِینَ ۔ اَللّٰھُمَّ وَاجْعَلْ مُحَمَّداً صَلَّی اللّهُ عَلَیْہِ وَآلِہِ ٲَدْنَی

میں سے کسی کو عطا فرمائے گا اے معبود! حضرت محمد کو تمام نبیوں کی

الْمُرْسَلِینَ مِنْکَ مَجْلِساً وَٲَفْسَحَھُمْ فِی الْجَنَّۃِ عِنْدَکَ مَنْزِلاً وَٲَ قْرَبَھُمْ إلَیْکَ وَسِیلَۃً

نسبت خود سے زیادہ قریب کی نشست دے اور جنت میں انہیں بہت کشادہ مکان عطا کر اور اپنے قرب کا نزدیکی ذریعہ عنایت فرما

وَاجْعَلْہُ ٲَوَّلَ شافِعٍ، وَٲَوَّلَ مُشَفَّعٍ، وَٲَوَّلَ قائِلٍ، وَٲَ نْجَحَ سائِلٍ، وَابْعَثْہُ الْمَقامَ

اور بنا دے ان کو پہلا شفیع اور جس کی شفاعت قبول ہوئی انہیں پہلا کلام کرنے والا بنا جس کا سوال پورا ہوا اور انہیں مقام محمو

الْمَحْمُودَ الَّذِی یَغْبِطُہُ بِہِ الْاَوَّلُونَ وَالاَْخِرُونَ یَا ٲَرْحَمَ الرَّاحِمِینَ، وَٲَسْٲَ لُکَ

فائز فرما جس سے سب اگلے پچھلے ان پر رشک کرنے لگیں اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے میں سوال کرتا ہوں

ٲَنْ تُصَلِّیَ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَٲَنْ تَسْمَعَ صَوْتِی وَتُجِیبَ دَعْوَتِی، وَتَتَجاوَزَ

تجھ سے کہ محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما اور یہ کہ میری آواز سن میری دعا قبول فرما میرے گناہوں سے

عَنْ خَطِیئَتِی، وَتَصْفَحَ عَنْ ظُلْمِی، وَتُنْجِحَ طَلِبَتِی، وَتَقْضِیَ حاجَتِی، وَتُنْجِزَ لِی

در گزر کر میرے ناروا عمل سے چشم پوشی فرمامیری ضرورت پوری کر میری حاجت بر لا اور مجھ سے کیا

مَا وَعَدْتَنِی، وَتُقِیلَ عَثْرَتِی، وَتَغْفِرَ ذُ نُوبِی، وَتَعْفُوَ عَنْ جُرْمِی، وَتُقْبِلَ عَلَیَّ وَلاَ

ہوا وعدہ پورا فرما میری لغزشیں معاف کرمیرے گناہ بخش دے میرا جرم معاف فرما میری طرف توجہ کر اور مجھ

تُعْرِضَ عَنِّی وَتَرْحَمَنِی وَلاَ تُعَذِّبَنِی، وَتُعافِیَنِی وَلاَ تَبْتَلِیَنِی، وَتَرْزُقَنِی مِنَ الرِّزْقِ

سے دھیان نہ ہٹا مجھ پر رحم کر اور عذاب نہ دے مجھے بچائے رکھ اور مصیبت میں نہ ڈال مجھے بہترین روزی عطا فرما

ٲَطْیَبَہُ وَٲَوْسَعَہُ وَلاَ تَحْرِمَنِی، یَا رَبِّ وَاقْضِ عَنِّی دَیْنِی، وَضَعْ عَنِّی وِزْرِی،

اور اس میں وسعت دے اور مجھے محروم نہ کر اے پروردگار میرا قرض ادا کر دے اور مجھ سے بوجھ ہٹا دے اور مجھ پر وہ بار نہ ڈال

وَلاَ تُحَمِّلْنِی مَا لاَ طاقَۃَ لِی بِہِ، یَا مَوْلایَ وَٲَدْخِلْنِی فِی کُلِّ خَیْرٍ ٲَدْخَلْتَ فِیہِ

جو میری طاقت سے زیادہ ہو اے میرے مالک اور مجھے ہر اس نیکی میں داخل کر جس میں تو نے

مُحَمَّداً وَآلَ مُحَمَّدٍ وَٲَخْرِجْنِی مِنْ کُلِّ سُوئٍ ٲَخْرَجْتَ مِنْہُ مُحَمَّداً وَآلَ مُحَمَّدٍ

محمد(ص) و آل محمد(ص) کو داخل کیا اور مجھے ہر اس بدی سے دور رکھ جس سے تو نے محمد(ص) و آل محمد(ص) کو دور رکھا تیری صلوات ہو

صَلَواتُکَ عَلَیْہِ وَعَلَیْھِمْ، وَاَلسَّلاَمُ عَلَیْہِ وَعَلَیْھِمْ وَرَحْمَۃُ اللّهِ وَبَرَکاتُہُ ۔

ان(ص) کی آل (ع) پر اور سلام ہو ان پر اور ان(ص) کی آل(ع) پر اور خدا کی رحمت اور برکتیں ہوں

پھر تین مرتبہ کہے: اَللّٰھُمَّ إنِّی ٲَدْعُوکَ کَما ٲَمَرْتَنِی فَاسْتَجِبْ لِی کَما وَعَدْتَنِی پھر کہے: اَللّٰھُمَّ

اے معبود ! میں پکارتا ہوں تجھے جیسا تونے حکم دیا بس میری دعا قبول کر جیساکہ تو نے مجھ سے وعدہ کیا اے معبود! میں تجھ

إنِّی ٲَسْٲَلُکَ قَلِیلاً مِنْ کَثِیرٍ مَعَ حاجَۃٍ بِی إلَیْہِ عَظِیمَۃٍ، وَغِناکَ عَنْہُ قَدِیمٌ، وَھُوَ عِنْدِی

سے مانگتا ہوں بہت میں سے تھوڑا جس کی مجھے بڑی ضرورت ہے اور تو اس سے ہمیشہ بے نیاز ہے اور وہ میرے نزدیک بہت ہے

کَثِیرٌ وَھُوَ عَلَیْکَ سَھْلٌ یَسِیرٌ فَامْنُنْ عَلَیَّ بِہِ إنَّکَ عَلَی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیرٌ آمِینَ رَبَّ الْعالَمِینَ

اور تیرے لئے وہ بہت معمولی و آسان ہے پس وہ مجھے عطا فرما بے شک تو ہر چیز پر قدرت رکھتا ہے ایسا ہی ہو اے سب جہانوں کے رب ۔

﴿۵﴾ یہ دعا بھی پڑھے:اَلَّلھُمَّ اِنِّی اَدْعُوْکَ کَمَا اَمَرْتَنِیْ فَاسْتَجِبْ لِیْ کَمَا وَعَدْتَّنِیْ

اے معبود! میں دعا کرتا ہوں تجھ سے جیساکہ تو نے حکم دیا پس میری دعا قبول کر جیساکہ تو نے مجھ سے وعدہ کیا ۔

چونکہ یہ دعا بہت طویل ہے لہذا اختصار کو ملحوظ رکھتے ہوئے اسے یہاں نقل نہیں کیا گیا ۔ جو شخص یہ دعا پڑھنا چاہے وہ کتاب اقبال یا زاد المعاد کی طرف رجوع کرے ۔

﴿۶﴾ کتاب مقنعہ میں شیخ مفید (رح) نے ثقہ جلیل علی بن مہزیار سے روایت کی ہے کہ امام محمد تقی -نے فرمایا کہ ماہ رمضان کے دنوں اور راتوں میں اس دعا کو زیادہ سے زیادہ پڑھے :

یَا ذَا الَّذِی کانَ قَبْلَ کُلِّ شَیْئٍ، ثُمَّ خَلَقَ کُلَّ شَیْئٍ، ثُمَّ یَبْقی وَیَفْنی کُلُّ شَیْئٍ

اے وہ جو ہر چیز سے پہلے موجود تھا پھر ہر ایک چیز کو پیدا کیا تو وہ جو باقی رہے گا اور ہر چیز فنا ہو جائے گی

یَا ذَا الَّذِی لَیْسَ کَمِثْلِہِ شَیْئٌ، وَیَا ذَا الَّذِی لَیْسَ فِی السَّمٰوَاتِ الْعُلی، وَلاَ فِی

اے وہ جس کی مانند کوئی چیز نہیں اے وہ جو نہ بلند آسمانوں میں ہے اور نہ پست ترین

الْاَرَضِینَ السُّفْلی، وَلاَ فَوْقَھُنَّ وَلاَ تَحْتَھُنَّ وَلاَ بَیْنَھُنَّ إلہٌ یُعْبَدُ غَیْرُھُ، لَکَ الْحَمْدُ

زمینوں میں ہے اور نہ ان کے اوپر اور نہ ان کے نیچے ہے اور نہ درمیان میں ہے وہ معبود جس کے سوا کوئی معبود نہیں تیرے لئے حمد

حَمْداً لاَ یَقْوی عَلَی إحْصائِہِ إلاَّ ٲَ نْتَ، فَصَلِّ عَلَی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ صَلاۃً لاَ

ہے وہ حمد کہ کوئی اسے شمار نہ کر سکے سوائے تیرے پس حضرت محمد(ص) و آل محمد(ص) پر رحمت نازل فرما

یَقْوی عَلَی إحْصائِہا إلاَّ ٲَ نْتَ ۔

وہ رحمت کہ کوئی اسے شمار نہ کر سکے سوائے تیرے ۔

﴿۷﴾بلد الامین و مصباح میں شیخ کفعمی نے سید بن باقی سے نقل کیا ہے کہ جو شخص ماہ رمضان کے شب وروز میں یہ دعا پڑھے تو اﷲ اسکے چالیس سال کے گناہ معاف کردیگا اور وہ یہ دعا ہے:

اَللّٰھُمَّ رَبَّ شَھْرِ رَمَضانَ الَّذِی ٲَ نْزَلْتَ فِیہِ الْقُرْآنَ، وَافْتَرَضْتَ عَلَی عِبادِکَ فِیہِ

اے معبود ! اے ماہ رمضان کے پروردگار کہ جس میں تو نے قرآن نازل کیا اور تونے اپنے بندوں پر اس کے

الصِّیامَ، ارْزُقْنِی حَجَّ بَیْتِکَ الْحَرامِ فِی ہذَا الْعامِ وَفِی کُلِّ عامٍ، وَاغْفِرْ لِیَ الذُّنُوبَ

روزے فرض کیئے کہ مجھے اپنے بیت الحرام کعبہ کا حج نصیب فرما اس سال میں اور آئیندہ سالوں میں اور میرے بڑے بڑے گناہ

الْعِظامَ فَ إنَّہُ لاَ یَغْفِرُہا غَیْرُکَ یَا ذَا الْجَلالِ وَالْاِکْرامِ ۔

بخش دے کیونکہ تیرے سوا کوئی انہیں نہیں بخش سکتا اے جلالت اور برزگیوں والے۔

﴿۸﴾ یہ ذکر جو محدث فیض نے خلاصۃ الاذکار میں نقل کیا ہے اس کا ہر روز سو مرتبہ ورد کرے :

سُبْحانَ الضَّارِّ النَّافِعِ سُبْحانَ الْقاضِی بِالْحَقِّ، سُبْحانَ الْعَلِیِّ الْاَعْلی سُبْحانَہُ

پاک ہے نقصان و نفع دینے والا پاک ہے وہ حق کے ساتھ فیصلہ کرنے والا پاک ہے وہ بلند و برتر پاکیزگی ہے

وَبِحَمْدِھِ، سُبْحانَہُ وَتَعالی۔

اس کی حمد کے ساتھ پاکیزگی ہے اس کی اور بلندی۔

﴿۹﴾ مقنعہ میں شیخ مفید (رح) نے فرمایا کہ ماہ رمضان کی سنتوں میں سے ایک حضرت رسول پر صلوٰۃ بھیجنا ہے کہ ہر روز سو مرتبہ صلوات بھیجے اور اگر اس سے زیادہ بھیجے تو یہ افضل عمل ہے :

 

 

 

فہرست مفاتیح الجنان

فہرست سورہ قرآنی

تعقیبات, دعائیں، مناجات

جمعرات اور جمعہ کے فضائل

جمعرات اور جمعہ کے فضائل
شب جمعہ کے اعمال
روز جمعہ کے اعمال
نماز رسول خدا ﷺ
نماز حضرت امیرالمومنین
نماز حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا
بی بی کی ایک اور نماز
نماز امام حسن
نماز امام حسین
نماز امام زین العابدین
نماز امام محمد باقر
نماز امام جعفر صادق
نماز امام موسیٰ کاظم
نماز امام علی رضا
نماز امام محمد تقی
نماز حضرت امام علی نقی
نماز امام حسن عسکری
نماز حضرت امام زمانہ (عج)
نماز حضرت جعفر طیار
زوال روز جمعہ کے اعمال
عصر روز جمعہ کے اعمال

تعین ایام ہفتہ برائے معصومین

بعض مشہور دعائیں

قرآنی آیات اور دعائیں

مناجات خمسہ عشرہ

ماہ رجب کی فضیلت اور اعمال

ماہ شعبان کی فضیلت واعمال

ماہ رمضان کے فضائل و اعمال

ماہ رمضان کے فضائل و اعمال
(پہلا مطلب)
ماہ رمضان کے مشترکہ اعمال
(پہلی قسم )
اعمال شب و روز ماہ رمضان
(دوسری قسم)
رمضان کی راتوں کے اعمال
دعائے افتتاح
(ادامہ دوسری قسم)
رمضان کی راتوں کے اعمال
(تیسری قسم )
رمضان میں سحری کے اعمال
دعائے ابو حمزہ ثمالی
دعا سحر یا عُدَتِیْ
دعا سحر یا مفزعی عند کربتی
(چوتھی قسم )
اعمال روزانہ ماہ رمضان
(دوسرا مطلب)
ماہ رمضان میں شب و روز کے مخصوص اعمال
اعمال شب اول ماہ رمضان
اعمال روز اول ماہ رمضان
اعمال شب ١٣ و ١٥ رمضان
فضیلت شب ١٧ رمضان
اعمال مشترکہ شب ہای قدر
اعمال مخصوص لیلۃ القدر
اکیسویں رمضان کی رات
رمضان کی ٢٣ ویں رات کی دعائے
رمضان کی ٢٧ویں رات کی دعا
رمضان کی٣٠ویں رات کی دعا

(خاتمہ )

رمضان کی راتوں کی نمازیں
رمضان کے دنوں کی دعائیں

ماہ شوال کے اعمال

ماہ ذیقعدہ کے اعمال

ماہ ذی الحجہ کے اعمال

اعمال ماہ محرم

دیگر ماہ کے اعمال

نوروز اور رومی مہینوں کے اعمال

باب زیارت اور مدینہ کی زیارات

مقدمہ آداب سفر
زیارت آئمہ کے آداب
حرم مطہر آئمہ کا اذن دخول
مدینہ منورہ کی زیارات
کیفیت زیارت رسول خدا ۖ
زیارت رسول خدا ۖ
کیفیت زیارت حضرت فاطمہ سلام اللہ علیہا
زیارت حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا
زیارت رسول خدا ۖ دور سے
وداع رسول خدا ۖ
زیارت معصومین روز جمعہ
صلواة رسول خدا بزبان حضرت علی
زیارت آئمہ بقیع
قصیدہ ازریہ
زیارت ابراہیم بن رسول خدا ۖ
زیارت فاطمہ بنت اسد
زیارت حضرت حمزہ
زیارت شہداء احد
تذکرہ مساجد مدینہ منورہ
زیارت وداع رسول خدا ۖ
وظائف زوار مدینہ

امیرالمومنین کی زیارت

فضیلت زیارت علی ـ
کیفیت زیارت علی
پہلی زیارت مطلقہ
نماز و زیارت آدم و نوح
حرم امیر المومنین میں ہر نماز کے بعد کی دعا
حرم امیر المومنین میں زیارت امام حسین ـ
زیارت امام حسین مسجد حنانہ
دوسری زیارت مطلقہ (امین اللہ)
تیسری زیارت مطلقہ
چوتھی زیارت مطلقہ
پانچویں زیارت مطلقہ
چھٹی زیارت مطلقہ
ساتویں زیارت مطلقہ
مسجد کوفہ میں امام سجاد کی نماز
امام سجاد اور زیارت امیر ـ
ذکر وداع امیرالمؤمنین
زیارات مخصوصہ امیرالمومنین
زیارت امیر ـ روز عید غدیر
دعائے بعد از زیارت امیر
زیارت امیر المومنین ـ یوم ولادت پیغمبر
امیر المومنین ـ نفس پیغمبر
ابیات قصیدہ ازریہ
زیارت امیر المومنین ـ شب و روز مبعث

کوفہ کی مساجد

امام حسین کی زیارت

فضیلت زیارت امام حسین
آداب زیارت امام حسین
اعمال حرم امام حسین
زیارت امام حسین و حضرت عباس
(پہلا مطلب )
زیارات مطلقہ امام حسین
پہلی زیارت مطلقہ
دوسری زیارت مطلقہ
تیسری زیارت مطلقہ
چوتھی زیارت مطلقہ
پانچویں زیارت مطلقہ
چھٹی زیارت مطلقہ
ساتویں زیارت مطلقہ
زیارت وارث کے زائد جملے
کتب حدیث میں نااہلوں کا تصرف
دوسرا مطلب
زیارت حضرت عباس
فضائل حضرت عباس
(تیسرا مطلب )
زیارات مخصوص امام حسین
پہلی زیارت یکم ، ١٥ رجب و ١٥شعبان
دوسری زیارت پندرہ رجب
تیسری زیارت ١٥ شعبان
چوتھی زیارت لیالی قدر
پانچویں زیارت عید الفطر و عید قربان
چھٹی زیارت روز عرفہ
کیفیت زیارت روز عرفہ
فضیلت زیارت یوم عاشورا
ساتویں زیارت یوم عاشورا
زیارت عاشورا کے بعد دعا علقمہ
فوائد زیارت عاشورا
دوسری زیارت عاشورہ (غیر معروفہ )
آٹھویں زیارت یوم اربعین
اوقات زیارت امام حسین
فوائد تربت امام حسین

کاظمین کی زیارت

زیارت امام رضا

سامرہ کی زیارت

زیارات جامعہ

چودہ معصومین پر صلوات

دیگر زیارات

ملحقات اول

ملحقات دوم

باقیات الصالحات

مقدمہ
شب وروز کے اعمال
شب وروز کے اعمال
اعمال مابین طلوعین
آداب بیت الخلاء
آداب وضو اور فضیلت مسواک
مسجد میں جاتے وقت کی دعا
مسجد میں داخل ہوتے وقت کی دعا
آداب نماز
آذان اقامت کے درمیان کی دعا
دعا تکبیرات
نماز بجا لانے کے آداب
فضائل تعقیبات
مشترکہ تعقیبات
فضیلت تسبیح بی بی زہرا
خاک شفاء کی تسبیح
ہر فریضہ نماز کے بعد دعا
دنیا وآخرت کی بھلائی کی دعا
نماز واجبہ کے بعد دعا
طلب بہشت اور ترک دوزخ کی دعا
نماز کے بعد آیات اور سور کی فضیلت
سور حمد، آیة الکرسی، آیة شہادت اورآیة ملک
فضیلت آیة الکرسی بعد از نماز
جو زیادہ اعمال بجا نہ لا سکتا ہو وہ یہ دعا پڑھے
فضیلت تسبیحات اربعہ
حاجت ملنے کی دعا
گناہوں سے معافی کی دعا
ہر نماز کے بعد دعا
قیامت میں رو سفید ہونے کی دعا
بیمار اور تنگدستی کیلئے دعا
ہر نماز کے بعد دعا
پنجگانہ نماز کے بعد دعا
ہر نماز کے بعد سور توحید کی تلاوت
گناہوں سے بخشش کی دعا
ہرنماز کے بعد گناہوں سے بخشش کی دعا
گذشتہ دن کا ضائع ثواب حاصل کرنے کی دعا
لمبی عمر کیلئے دعا
(تعقیبات مختصر)
نماز فجر کی مخصوص تعقیبات
گناہوں سے بخشش کی دعا
شیطان کے چال سے بچانے کی دعا
ناگوار امر سے بچانے والی دعا
بہت زیادہ اہمیت والی دعا
دعائے عافیت
تین مصیبتوں سے بچانے والی دعا
شر شیطان سے محفوظ رہنے کی دعا
رزق میں برکت کی دعا
قرضوں کی ادائیگی کی دعا
تنگدستی اور بیماری سے دوری کی دعا
خدا سے عہد کی دعا
جہنم کی آگ سے بچنے کی دعا
سجدہ شکر
کیفیت سجدہ شکر
طلوع غروب آفتاب کے درمیان کے اعمال
نماز ظہر وعصر کے آداب
غروب آفتاب سے سونے کے وقت تک
آداب نماز مغرب وعشاء
تعقیبات نماز مغرب وعشاء
سونے کے آداب
نیند سے بیداری اور نماز تہجد کی فضیلت
نماز تہجد کے بعددعائیں اور اذکار

صبح و شام کے اذکار و دعائیں

صبح و شام کے اذکار و دعائیں
طلوع آفتاب سے پہلے
طلوع وغروب آفتاب سے پہلے
شام کے وقت سو مرتبہ اﷲاکبر کہنے کی فضیلت
فضیلت تسبیحات اربعہ صبح شام
صبح شام یا شام کے بعد اس آیة کی فضیلت
ہر صبح شام میں پڑھنے والا ذکر
بیماری اور تنگدستی سے بچنے کیلئے دعا
طلوع وغروب آفتاب کے موقعہ پر دعا
صبح شام کی دعا
صبح شام بہت اہمیت والا ذکر
ہر صبح چار نعمتوں کو یاد کرنا
ستر بلائیں دور ہونے کی دعا
صبح کے وقت کی دعا
صبح صادق کے وقت کی دعا
مصیبتوں سے حفاظت کی دعا
اﷲ کا شکر بجا لانے کی دعا
شیطان سے محفوظ رہنے کی دعا
دن رات امان میں رہنے کی دعا
صبح شام کو پڑھنی کی دعا
بلاؤں سے محفوظ رہنے کی دعا
اہم حاجات بر لانے کی دعا

دن کی بعض ساعتوں میں دعائیں

پہلی ساعت
دوسری ساعت
تیسری ساعت
چوتھی ساعت
پانچویں ساعت
چھٹی ساعت
ساتویں ساعت
آٹھویں ساعت
نویں ساعت
دسویں ساعت
گیارہویں ساعت
بارہویں ساعت
ہر روز وشب کی دعا
جہنم سے بچانے والی دعا
گذشتہ اور آیندہ نعمتوں کا شکر بجا لانے کی دعا
نیکیوں کی کثرت اور گناہوں سے بخشش کی دعا
ستر قسم کی بلاؤں سے دوری کی دعا
فقر وغربت اور وحشت قبر سے امان کی دعا
اہم حاجات بر لانے والی دعا
خدا کی نعمتوں کا شکر ادا کرنے والی دعا
دعاؤں سے پاکیزگی کی دعا
فقر وفاقہ سے بچانے والی دعا
چار ہزار گناہ کیبرہ معاف ہو جانے کی دعا
کثرت سے نیکیاں ملنے اور شر شیطان سے محفوظ رہنے کی دعا
نگاہ رحمت الہی حاصل ہونے کی دعا
بہت زیادہ اجر ثواب کی دعا
عبادت اور خلوص نیت
کثرت علم ومال کی دعا
دنیاوی اور آخروی امور خدا کے سپرد کرنے کی دعا
بہشت میں اپنے مقام دیکھنے کی دعا

دیگر مستحبی نمازیں

نماز اعرابی
نماز ہدیہ
نماز وحشت
دوسری نماز وحشت
والدین کیلئے فرزند کی نماز
نماز گرسنہ
نماز حدیث نفس
نماز استخارہ ذات الرقاع
نماز ادا قرض وکفایت از ظلم حاکم
نماز حاجت
نماز حل مہمات
نماز رفع عسرت(پریشانی)
نماز اضافہ رزق
نماز دیگر اضافہ رزق
نماز دیگر اضافہ رزق
نماز حاجت
دیگر نماز حاجت
دیگر نماز حاجت
دیگر نماز حاجت
دیگر نماز حاجت
نماز استغاثہ
نماز استغاثہ بی بی فاطمہ
نماز حضرت حجت(عج)
دیگر نماز حضرت حجت(عج)
نماز خوف از ظالم
تیزی ذہن اور قوت حافظہ کی نماز
گناہوں سے بخشش کی نماز
نماز دیگر
نماز وصیت
نماز عفو
(ایام ہفتہ کی نمازیں)
ہفتہ کے دن کی نماز
اتوار کے دن کی نماز
پیر کے دن کی نماز
منگل کے دن کی نماز
بدھ کے دن کی نماز
جمعرات کے دن کی نماز
جمعہ کے دن کی نماز

بیماریوں کی دعائیں اور تعویذات

بیماریوں کی دعائیں اور تعویذات
دعائے عافیت
رفع مرض کی دعا
رفع مرض کی ایک اوردعا
سر اور کان درد کا تعویذ
سر درد کا تعویذ
درد شقیقہ کا تعویذ
بہرے پن کا تعویذ
منہ کے درد کا تعویذ
دانتوں کے درد کا تعویذ
دانتوں کے درد کا تعویذ
دانتوں کے درد کا ایک مجرب تعویذ
دانتوں کے درد کا ایک اور تعویذ
درد سینے کا تعویذ
پیٹ درد کا تعویذ
درد قولنج کا تعویذ
پیٹ اور قولنج کے درد کا تعویذ
دھدر کا تعویذ
بدن کے ورم و سوجن کا تعویذ
وضع حمل میں آسانی کا تعویذ
جماع نہ کر سکنے والے کا تعویذ
بخار کا تعویذ
پیچش دور کرنے کی دعا
پیٹ کی ہوا کیلئے دعا
برص کیلئے دعا
بادی وخونی خارش اور پھوڑوں کا تعویذ
شرمگاہ کے درد کی دعا
پاؤں کے درد کا تعویذ
گھٹنے کے درد
پنڈلی کے درد
آنکھ کے درد
نکسیر کا پھوٹن
جادو کے توڑ کا تعویذ
مرگی کا تعویذ
تعویذسنگ باری جنات
جنات کے شر سے بچاؤ
نظر بد کا تعویذ
نظر بد کا ایک اور تعویذ
نظر بد سے بچنے کا تعویذ
جانوروں کا نظر بد سے بچاؤ
شیطانی وسوسے دور کرنے کا تعویذ
چور سے بچنے کا تعویذ
بچھو سے بچنے کا تعویذ
سانپ اور بچھو سے بچنے کا تعویذ
بچھو سے بچنے کا تعویذ

کتاب الکافی سے منتخب دعائیں

سونے اور جاگنے کی دعائیں

گھر سے نکلتے وقت کی دعائیں

نماز سے پہلے اور بعد کی دعائیں

وسعت رزق کیلئے بعض دعائیں

ادائے قرض کیلئے دعائیں

غم ،اندیشہ و خوف کے لیے دعائیں

بیماریوں کیلئے چند دعائیں

چند حرز و تعویذات کا ذکر

دنیا وآخرت کی حاجات کیلئے دعائیں

بعض حرز اور مختصر دعائیں

حاجات طلب کرنے کی مناجاتیں

بعض سورتوں اور آیتوں کے خواص

خواص با سور قرآنی
خواص بعض آیات سورہ بقرہ وآیة الکرسی
خواص سورہ قدر
خواص سورہ اخلاص وکافرون
خواص آیة الکرسی اورتوحید
خواص سورہ توحید
خواص سورہ تکاثر
خواص سورہ حمد
خواص سورہ فلق و ناس اور سو مرتبہ سورہ توحید
خواص بسم اﷲ اور سورہ توحید
آگ میں جلنے اور پانی میں ڈوبنے سے محفوظ رہنے کی دعا
سرکش گھوڑے کے رام کی دعا
درندوں کی سر زمین میں ان سے محفوظ رہنے کی دعا
تلاش گمشدہ کا دستور العمل
غلام کی واپسی کیلئے دعا
چور سے بچنے کیلئے دعا
خواص سورہ زلزال
خواص سورہ ملک
خواص آیہ الا الی اﷲ تصیر الامور
رمضان کی دوسرے عشرے میں اعمال قرآن
خواب میں اولیاء الہی اور رشتے داروں سے ملاقات کا دستور العمل
اپنے اندر سے غمزدہ حالت کو دور کرنے کا دستور العمل
اپنے مدعا کو خواب میں دیکھنے کا دستور العمل
سونے کے وقت کے اعمال
دعا مطالعہ
ادائے قرض کا دستور العمل
تنگی نفس اور کھانسی دور کرنے کا دستور العمل
رفع زردی صورت اور ورم کیلئے دستور العمل
صاحب بلا ومصیبت کو دیکھتے وقت کا ذکر
زوجہ کے حاملہ ہونے کے وقت بیٹے کی تمنا کیلئے عمل
دعا عقیقہ
آداب عقیقہ
دعائے ختنہ
استخارہ قرآن مجید اور تسبیح کا دستور العمل
یہودی عیسائی اور مجوسی کو دیکھتے وقت کی دعا
انیس کلمات دعا جو مصیبتوں سے دور ہونے کا سبب ہیں
بسم اﷲ کو دروزے پر لکھنے کی فضیلت
صبح شام بلا وں سے تحفظ کی دعا
دعائے زمانہ غیبت امام العصر(عج)
سونے سے پہلے کی دعا
پوشیدہ چیز کی حفاظت کیلئے دستور العمل
پتھر توڑنے کا قرآنی عمل
سوتے اور بیداری کے وقت سورہ توحید کی تلاوت خواص
زراعت کی حفاظت کیلئے دستور العمل
عقیق کی انگوٹھی کی فضیلت
نیسان کے دور ہونے جانے کی دعا
نماز میں بہت زیادہ نیسان ہونے کی دعا
قوت حافظہ کی دوا اور دعا
دعاء تمجید اور ثناء پرودرگار

موت کے آداب اور چند دعائیں

ملحقات باقیات الصالحات

ملحقات باقیات الصالحات
دعائے مختصراورمفید
دعائے دوری ہر رنج وخوف
بیماری اور تکلیفوں کو دور کرنے کی دعا
بدن پر نکلنے والے چھالے دور کرنے کی دعا
خنازیر (ہجیروں )کو ختم کرنے کیلئے ورد
کمر درد دور کرنے کیلئے دعا
درد ناف دور کرنے کیلئے دعا
ہر درد دور کرنے کا تعویذ
درد مقعد دور کرنے کا عمل
درد شکم قولنج اور دوسرے دردوں کیلئے دعا
رنج وغم میں گھیرے ہوے شخص کا دستور العمل
دعائے خلاصی قید وزندان
دعائے فرج
نماز وتر کی دعا
دعائے حزین
زیادتی علم وفہم کی دعا
قرب الہی کی دعا
دعاء اسرار قدسیہ
شب زفاف کی نماز اور دعا
دعائے رہبہ (خوف خدا)
دعائے توبہ منقول از امام سجاد