Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، سب سے اعلیٰ ثواب صبر کرنے کا ہوتا ہے۔ غررالحکم حدیث6240

نہج البلاغہ خطبات

خطبہ 99: عبد الملک بن مروان کی تاراجیوں کے متعلق فرمایا

وہ ہراّول سے پہلے اوّل ہے اور ہر آخر کے بعد آخر ہے ۔ اس کی اولیت کے سبب سے واجب ہے ۔ کہ اس سے پہلے کوئی نہ ہو، اور اس کے آخر ہونے کی وجہ سے ضروری ہے کہ اس کے بعد کوئی نہ ہو۔ میں گواہی دیتا ہوں کہ اللہ کے سوا کوئی معبود نہیں ۔ ایسی گواہی جس میں ظاہر و باطن یکساں ، اور دل و زبان ہمنوا ہیں ۔

اے لوگو! تم میری مخالفت کے جرم میں مبتلا نہ ہو، اور میری نافرمانی کر کے حیران و پریشان نہ ہو۔ میری باتیں سنتے وقت تو ایک دوسرے کی طرف آنکھوں کے اشارے نہ کرو اس ذات کی قسم! جس نے دانہ کو شگافتہ کیا اور ذی روح کو پیدا کیا ہے ۔ میں جو خبر تمہیں دیتا ہوں ۔ وہ نبی کی طرف سے پہنچی ہوئی ہے ۔ نہ خبر دینے والے (رسول) نے جھوٹ کہا، نہ سننے والا جاہل تھا (لو سنو!)میں (۱) ایک سخت گمراہیوں میں پڑے ہوئے شخص کو گویا اپنی آنکھوں سے دیکھ رہا ہوں کہ وہ شام میں کھڑا ہوا للکار رہا ہے اور اس نے اپنے جھنڈے کوفہ کے آس پاس کھلے میدانوں میں گاڑ دیئے ہیں ۔ چنانچہ جب اس کا منہ (پھار کھانے کو) کھل گیا اور ا سکی لگام کا دہانہ مضبوطہو گیا اور زمین میں اس کی پامالیاں سخت سے سخت ہو گئیں ، تو فتنوں نے اپنے دانتوں سے دنیا والوں کو کاٹنا شروع کر دیا ور جنگ کا دریا تھپیڑے مارنے لگا اور دنوں کی سختی سامنے آگئی اور راتوں کی تکلیف شدت اختیار کر گئی۔ بس ادھر اس کی کھیتی پختہ ہوئی اور فصل تیار ہوئی اور اس کی سر مستیاں جوش دکھانے لگیں اور تلواریں چمکنے لگیں ۔ ادھر سخت فتنہ و شر کے جھنڈے گڑ گئے اور اندھیری رات اور متلاطم دریا کی طرح آگے بڑھ آئے اس کے علاوہ اور کتنے ہی تیز جھکڑ کوفہ کو اکھیڑ ڈالیں گے اور کتنی ہی سخت آندھیاں اس پر آئیں گے ۔ اور عنقریب جماعتیں جماعتوں سے گتھ جائیں گی اور کھڑی کھیتیوں کو کاٹ دیا جائے گا اور کٹے ہوئے حاصلوں کو توڑ پھوڑ دیا جائے گا۔

(۱) اس سے بعض نے معاویہ اور بعض نے عبدالملک ابن مردان مراد لیا ہے ۔