Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، توبۃ النصوح یہ ہے کہ : گناہ کرنے کے بعد دل میں اس پر پشیمانی ہو، زبان پر اس کے لیے استغفار ہو اور دل میں یہ پختہ ارادہ ہو کہ پھر ایسا نہیں کرے گا۔ بحارالانوار کتاب الروضۃ باب16 حدیث66

نہج البلاغہ خطبات

خطبہ 213: آپ [ع]کے دُعائیہ کلمات

امیرالمومنین علیہ السلام کے وہ دعائیہ کلمات جو اکثر آپ کی زبان پر جاری رہتے تھے۔

تمام حمد اس اللہ کے لےے ہے جس نے مجھے اس حالت میں رکھا کہ نہ مردہ ہو ں ،نہ بیمار ،نہ میری رگوں پر برص کے جراثیم کا حملہ ہوا ،نہ برے اعمال (کے نتائج)میں گرفتار ہو ں نہ بے اولاد ہوں ،نہ دین سے برگشتہ نہ اپنے پروردگار کا منکر ہوں اور نہ ایمان سے متوحش نہ میری عقل میں فتو ر آیا ہے اورنہ پہلی امتوں کے سے عذاب میں مبتلا ہوں ۔میں اس کا بے اختیار بند ہ اور اپنے نفس پر ستم ران ہوں (اے اللہ )تیری حجّت مجھ پر تمام ہو چکی ہے ،اور میرے لےے اب کو ئی عذرکی گنجائش نہیں ہے ۔خدایا !مجھ میں کسی چیز کے حاصل کرنے کی قوت نہیں سوا اس کے کہ جوتو مجھے عطا کردے اور کسی چیز سے بچنے کی سکت نہیں سوائے اس کے جس سے تو مجھے بچائے رکھے ۔اے اللہ میں تجھ سے پناہ کا خواستگا ر ہو ں کہ تیری ثروت کے باوجود فقیرو تہید ست رہوں یاتیری رہنمائی کے ہوتے ہوئے بھٹک جاؤں یا تیری سلطنت میں رہتے ہوئے ستایا جاؤں یا ذلیل کیا جاؤں ۔ جبکہ تمام اختیارات تجھے حاصل ہیں ۔خدایا!میری ان نفیس چیزوں میں جنہیں تو چھین لے گا ۔میری روح کو اوّلیت کا درجہ عطا کر اور مجھے سونپی ہو ئی ان امانتوں میں جنہیں تو پلٹالے گا اسے پہلی امانت قرا ر دے۔

اے اللہ ! ہم تجھ سے پناہ کے طلب گا ر ہیں ۔اس بات سے کہ تےرے ارشا د سے منہ موڑیں یا ایسے فتنوں میں پڑجائیں کہ تیرے دین سے پھر جائیں ۔یا تیری طرف سے آئی ہوئی ہدایت کو قبول کرنے کی بجائے نفسانی خواہشیں ہمیں برائی کی طرف لے جائیں ۔