Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، بخل تمام عیبوں کا مجموعہ ہے، وہ ایسی مہار ہے جس کے ذریعہ ہر برائی کی طرف کھینچ کر لے جایا جاتا ہے۔ نھج البلاغۃ حکمت 378

نہج البلاغہ خطبات

خطبہ 201: ۔دُنیا کی بے ثباتی اور زاد ِآخرت مہیّا کرنے کے لئے فرمایا

اے لوگو !یہ دنیا گزرگاہ ہے اور آخر ت جائے قرا ر ہے ۔اس راہ گذر سے اپنی منزل کے لئے توشہ اٹھا لو جس کے سامنے تمہا را کوئی بھید چھپا نہیں کے ر ہ سکتا اپنے پردے چاک نہ کرو ۔قبل اس کے تمہارے جسم دنیا سے الگ کر دیئے جائیں اپنے دل اس سے ہٹا لو ۔اس دنیا میں تمہیں جانچا جا رہا ہے لیکن تمہیں پیدا دوسری جگہ کے لئے کیا گیا ہے جب انسان مرتا ہے تو لوگ کہتے ہیں کیا چھوڑ گیا ہے ؟اور فرشتے کہتے ہیں کہ اس نے آگے کے لئے کیا سرو سامان کیا ہے ؟خدا تمہا ر ا بھلا کرے کچھ آگے کے لئے بھی بھیجو کہ وہ تمہا رے لئے ایک طرح سے(اللہ کے ذمہ )قرضہ ہو گا ۔سب کا سب پیچھے نہ چھوڑ جاؤ کہ وہ تمہارے لئے بوجھ ہو گا ۔