Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، تمہارا بہترین تجربہ وہ ہے جس سے تمہیں نصیحت حاصل ہو۔ نہج البلاغہ مکتوب31

نہج البلاغہ خطبات

]اللہ نے) آپ کو اس وقت رسولبنا کر بھیجا جب کہ رسولوں کا سلسلہ رکا ہوا تھا اور امتیں مدت سے پڑی سو رہی تھیں اور (دین کی) مضبوط رسی کے بل کھل چکے تھے۔ چنانچہ آپ ان کے پاس پہلی کتابوں کی تصدیق (کرنے والی کتاب) اور ایک ایسا نور لے کر آئے کہ جس کی پیروی کی جاتی ہے اور وہ قرآن ہے۔ اس کی طرف سے خبر دیتا ہوں کہ اس میں آئندہ کے معلومات گذشتہ واقعات اور تمہاری بیماریوں کا چارہ اور تمہارے باہمی تعلقات کی شیرازہ بندی ہے۔

اس خطبہ کا ایک جز یہ ہے : اس وقت کوئی پختہ گھر اور کوئی اونی خےمہ ایسا نہ بچے گا کہ جس میں ظالم غم و حزن کو داخل نہ کریں اور سختیوں کو اس کے اندر نہ پہنچائیں وہ دن ایسا ہوگا کہ آسمان میں تمہارا کوئی عذر خواہ اور زمین می کوئی تمہارا مدد گار نہ رہے گا۔ تم نے امر (خلافت) کیلئے نااہلوں کو چن لیا اور اسی جگہ پر سے لااتارا کہ جو اس کے اترنے کی جگہ نہ تھی۔ عنقریب اللہ ظلم ڈھانے والوں سے بدلہ لے گا۔ کھانے کےبدلے میں کھانے کا اور پینے کے بدلے میں پینے کا یوں کہ انہیں کھانے کیلئے حنظل اور پینے کے لیے ایلوا اور زہریلا ہل دیا جائے گا اور ان کا اندرونی لباس خوف اور بیرونی پہناوا تلوار ہوگا۔ وہ گناہوں کیسواریاں اور خطاؤں کے باربردار اونٹ ہیں ۔ میں قسم پر قسم کھا کر کہتا ہوں کہ میرے بعد بنی امیہ کو یہ خلافت اس طرح تھوک دینا پڑے گی جس طرح بلغم تھوکا جاتا ہے۔ پھر جب تک دن رات کا چکر چلتا رہے گا وہ اس کا ذائقہ نہ چکھیں گے اور نہ اس کا مزا اٹھا سکیں گے۔

خطبہ 156: بعثت پیغمبر کا تذکرہ ،بنی اُمیّہ کے مظالم اور ان کا انجام