Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام علی نے فرمایا، اللہ تعالیٰ کی طرف سے امام علیہ السلام کے ظہور کا انتظار(کرنا)مومن کی افضل عبادت ہے المحاسن حدیث44

نہج البلاغہ خطبات

خطبہ 143: دُنیا کی اہل دُنیا کے ساتھ روش اور بدعت و سنت کا بیان

اے لوگو! تم اس دنیا میں موت کی تیر اندازیوں کا ہدف ہو(جہاں ) ہر گھونٹ کے ساتھ اچھو ہے اور ہر لقمئہ میں گلو گیر پھندا ہے ۔ جہاں تم ایک نعمت اس وقت تک نہیں پاتے جب تک دوسری نعمت جدا نہ ہو جائے ۔ اور تم میں سے کوئی زندگی پانے والا ایک دن کی زندگی میں قدم نہیں رکھتا جب تک اس کی مدتِ حیات میں سے ایک دن کم نہیں ہو جاتا اور اس کے کھانے میں کسی اور رزق کا اضافہ نہیں ہوتا جب تک پہلا رزق ختم نہ ہو جائے اور جب تک ایک نقش مٹ نہ جائے دوسرا نقش ابھرتا نہیں اور جب تک کوئی نئی چیز کہنہ و فرسودہ نہ ہوجائے دوسری نئی چیز حاصل نہیں ہوتی اور جب تک کٹی ہوئی فصل گر نہ جائے نئی فصل کھڑی نہیں ہوتی آباؤ اجداد گزر گئے اور ہم انہین کی شاخین ہیں جب جڑ ہی نہ رہی تو شاخیں کہاں رہ سکتی ہیں ۔

اسی خطبہ کا ایک جز یہ ہے ۔ کوئی بدعت وجود میں نہیں آتی۔ مگر یہ کہ اس کی وجہ سے سنت کو چھوڑنا پڑتا ہے ۔ بدعتی لوگوں سے بچوروشن طریقہ پر جمے رہو۔ پُرانی باتیں ہی اچھی ہیں اور (دین میں ) پید اکی ہوئی نئی چیزین بد ترین ہیں ۔