Danishkadah Danishkadah Danishkadah
حضرت امام جعفر صادق نے فرمایا، مومن کے دل کے لیے بسیار خوری سے بڑھ کر اور کوئی چیز مضر نہیں اور یہ دو چیزوں سنگدلی اور خواہشات کو جوش میں لانے کا سبب بنتی ہے مستدرک الوسائل حدیث 19627

محرم الحرام کے بارے میں اہم سوال و جواب

فلسفہ عزاداری

سوا ل۳۰:کیا فلسفہ عزاداری کے بارے میں سوال معقول ہے یا نہیں ؟ جواب : مسا ئل و اعتقا دات کے تحلیل و تجز یہ کے بارے جو تغیر و تحو ل ایجا د ہو ا ہے اس کی وجہ سے آج کا انسا ن ان حقا ئق و مفا ہیم کے با رے میں تحقیقی تفتیش کر نا چاہتا ہے، جن کے بارے وہ اعتقا د رکھتا تھا اور وہ انہیں اپنا ئے ہو ئے تھا، در حقیقت غیر جانبدار ہو کر تحقیق کرنا آج کے انسا ن کی خصوصیا ت میں سے ہے، اسی بناء پر انسان مسئلہ عزاداری کے بارے بھی غیر جا نبدارا نہ تحقیق کر نا چا ہتا ہے ، حقیقت یہ ہے کہ جب تک اس کی عقل کو عزاداری کے بارے میں کوئی قا بل قبو ل تو جیہ نہ مل جا ئے یا کم از کم وہ تو جیہ خلاف عقل نہ ہو اگرچہ عقل اسے قبو ل نہ کرے اس وقت تک وہ عزاداری کا قا ئل نہیں ہو گا ۔ مسائل کو اس نظر یہ سے دیکھنا بہت اچھی بات ہے ،یہ چیز انسا ن کے مذہبی اعتقا دا ت اور شیعی فرہنگ و اعتقادات کی تقویت
(۱) سور ہ شو ریٰ /۲۳، سور ہ ہود /۲۹، میز ا ن الحکمۃ ،ج۲ ،ص ۲۳۶
(۲) المحبۃ فی الکتا ب والسنۃ، ص ۱۶۹ ۔۱۷۰ اور ص ۱۸۱۔۱۸۲
(۳) بحارالا نوار، ج۴۴ص ۲۸۷
(۴) اما لی ،ص ۳۰۵
کاباعث بنتی ہے اور متوجہ رہنا چاہیے کہ اس نظری پشت پنا ہی کی وجہ سے انسان کے ایما ن میں بھی عظمت پیدا ہو تی ہے کیونکہ ایمان کی تشکیل معرفت کی بنیادوں پر ہو تی ہے ، لہٰذا عزا دا ر ی کے با رے بھی اگر کوئی قابل قبو ل اور معقو ل تو جیہ پیش کی جائے تو آج کی نسل کے اعتقا د کو اس با رے میں تقویت و مضبو طی حاصل ہو گی ۔