تدلیس (دھوکہ)

تدلیس(دھوکہ )کا معنی
٭سوال ۱۵۰:۔تدلیس (دھوکہ)سے کیا مرادہے؟
’’تدلیس ‘‘لُغت میں اس کا معنی فریب و دھوکہ دینا اور حقیقت کے بر خلاف کسی چیز کو ظاہر و نمایاں کرنا ہے، اصطلاح میں اس سے مراد ہے عورت یا مرد کی اس طرح توصیف کرنا کہ جس سے شادی کے حوالے سے دوسرا فرد و گروہ اشتباہ کا شکار ہو جا ئے یا وہ دھوکہ کھا جائے ، جیسے اسکے عیوب بیان نہ کرنا یا ایسی صفات ذکر کرنا جو اسمیں موجود نہیں ہیں، مثلاً کہے کہ وہ ڈاکٹر یا انجینئر ہے وغیرہ یعنی اگر یہ صفات ذکر نہ کی جائیں یا اسکے عیوب بیان کئے جاتے تو طرف ِ مقابل شادی پرراضی نہ ہوتا ہو۔(۱)

(حوالہ)
(ا) تحریر الوسیلہ ، ج۲،التدلیس، م۱۳، جامع المسائل ،ج۱، س ۱۴۹۹