ur

fb-poetry

زندگی

 برتر از اندیشہِ سود و زیاں ہے زندگی ہے کبھی جاں اور کبھی تسلیمِ جاں ہے زندگی تو اسے پیمانہِٴ امروز و فردا سے نہ ناپ جاوداں، پیہم دواں، ہر دم جواں ہے زندگی اپنی دنیا آپ پیدا کر اگر زندوں میں ہے سرِ آدم ہے ضمیرِ کن فکاں ہے زندگی زندگانی کی حقیقت کوہ کن کے دل سے پوچھ ...

مزید پڑھیں »

علامہ اقبالؒ

شور ہے ہوگئے دنیاسے مسلماں نابود ہم یہ کہتے ہیں کہ تھے بھی کہیں مسلم موجود؟ وضع میں تم ہو نصاریٰ تو تمدّن میں ہنود یہ مسلماں ہیں جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود یوں تو سیّد بھی ہو، مرزا بھی ہو، افغان بھی ہو تم سبھی کچھ ہو، بتائو تو مسلمان بھی ہو؟!

مزید پڑھیں »